مقبوضہ کشمیر ، معصوم لوگوں کے خون سے آلودہ بلدیاتی الیکشن کا نتیجہ آگیا

مقبوضہ کشمیر ، معصوم لوگوں کے خون سے آلودہ بلدیاتی الیکشن کا نتیجہ آگیا
مقبوضہ کشمیر ، معصوم لوگوں کے خون سے آلودہ بلدیاتی الیکشن کا نتیجہ آگیا

  


سرینگر (ڈیلی پاکستان آن لائن) مقبوضہ کشمیر میں معصوم لوگوں کے خون سے آلودہ بلدیاتی الیکشن کا بھارت کیلئے انتہائی مایوس کن نتیجہ آگیا ہے۔

مقبوضہ ریاست 1144 وارڈز میں الیکشن ہوا جس میں 363 نشستیں آزاد امیدواروں نے حاصل کیں اور سب سے بڑی اکثریت بن کر سامنے آئے۔مقبوضہ کشمیر کے عوام کی جانب سے ان نام نہاد انتخابات کا مکمل طور پر بائیکاٹ کیا گیا جس کے باعث ووٹر ٹرن آﺅٹ انتہائی مایوس کن رہا۔ پولنگ کے دوران پوری مقبوضہ وادی کو فوجی چھاﺅنی میں تبدیل کردیا گیا اور کشمیریوں کے خون کی وہ ہولی کھیلی گئی کہ جنت نظیر وادی مقتل بن کر رہ گئی۔

بھارتی حکومت کی جانب سے کرائے جانے والے انتخابات میں کشمیریوں کی عدم دلچسپی کے باعث 231 امیدوار بلامقابلہ منتخب ہوئے ۔ مودی سرکار نے باقی ماندہ 624 وارڈز میں الیکشن کرانے کی کوشش کی لیکن امیدوار ہی میسر نہیں آئے جس کے باعث صرف 208 وارڈز میں ہی الیکشن ہوسکا۔ حریت قیادت کی جانب سے بائیکاٹ کی اپیل کے باعث ووٹر ٹرن آﺅٹ بھی صرف5 سے  8 فیصد تک محدود ہوکر رہ گیا جبکہ کئی وارڈز میں امیدوار خود اپنے آپ کو بھی ووٹ ڈالنے نہ آئے۔ ایک امیدوار ایسا بھی کامیاب قرار دیا گیا جس کو صرف ایک ووٹ ملا تھا۔

مزید : اہم خبریں /قومی /الیکشن /سیاست


loading...