2ہزار سال پرانے اس پتھر پر کیا تحریر لکھی ہے؟ پڑھ کر تمام سائنسدان بھی دنگ رہ گئے کیونکہ۔۔۔

2ہزار سال پرانے اس پتھر پر کیا تحریر لکھی ہے؟ پڑھ کر تمام سائنسدان بھی دنگ رہ ...
2ہزار سال پرانے اس پتھر پر کیا تحریر لکھی ہے؟ پڑھ کر تمام سائنسدان بھی دنگ رہ گئے کیونکہ۔۔۔

  

تل ابیب(مانیٹرنگ ڈیسک) اسرائیل میں ماہرین آثار قدیمہ کو 2ہزار سال پرانا ایک پتھر ملا جس پر ایک ایسی تحریر لکھی تھی کہ پڑھ کر ماہرین بھی دنگ رہ گئے۔ میل آن لائن کے مطابق یہ پتھر یروشلم میں انٹرنیشنل کنونشن سنٹر کے قریب کھدائی کے دوران دریافت ہوا تھا۔ جب ماہرین نے اس پر لکھی تحریر پڑھی تو وہ دنگ رہ گئے کہ اس پر ہیبریو زبان کے ویسے ہی حروف کندہ تھے جو آج کل اسرائیل میں رائج ہیں۔

رپورٹ کے مطابق اس پتھر پرلکھا تھا کہ ”یروشلم کے ڈوڈلوس کا بیٹا حنانیا“(Hananiah son of Dodalos of Jerusalem) ۔ پتھر پر یروشلم کے ہیبریو سپیلنگ Yerushalayimلکھے تھے جو اسرائیل میں آج بھی رائج ہیں اور ایسے ہی لکھے جاتے ہیں۔ماہر آثار قدیمہ ڈیوڈ میوراک کا کہنا تھا کہ ”اس سے قبل بھی ہمیں اس کے شواہد مل چکے ہیں کہ قدیم زمانے میں بھی یروشلم انہی سپیلنگز کے ساتھ لکھا جاتا تھا۔ کچھ عرصہ قبل 66عیسوی کا ایک سکہ ملا تھا اور اس پر بھی انہی حروف میں یروشلم لکھا ہوا تھا۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -