’مسلمان رام کے بچے ہیں اور انہیں۔۔۔‘ بھارتی سیاستدان کا ایک بیان جس نے آگ لگادی

’مسلمان رام کے بچے ہیں اور انہیں۔۔۔‘ بھارتی سیاستدان کا ایک بیان جس نے آگ ...
’مسلمان رام کے بچے ہیں اور انہیں۔۔۔‘ بھارتی سیاستدان کا ایک بیان جس نے آگ لگادی

  

نئی دلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں مسلمانوں کے ساتھ بدسلوکی اور توہین کوئی نئی بات نہیں ہے البتہ حکمران جماعت کے ایک وزیر نے تو بے حیائی کی حد ہی کر دی ہے، ایسی بیہودہ بات کر دی ہے کہ سارے بھارت میں مسلمان سراپا احتجاج بن گئے ہیں۔ یونین وزیر گری راج سنگھ نے ایک جانب تو انتہائی متنازع بیان جاری کیا ہے اور ساتھ ہی مسلمانوں کو خبر دار کیا ہے کہ اگروہ رام مندر کی حمایت نہیں کرتے تو پھر سنگین نتائج کیلئے تیار ہوجائیں۔

ٹائمز آف انڈیا کے مطابق گزشتہ روز بھاگپت کے علاقے میں ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے گری راج سنگھ کا کہنا تھا کہ ” مسلمان مغلوں کے نہیں بلکہ رام کے جانشین ہیں، اس لیے انہیں بھی رام مندر کی حمایت کرنی چاہیے۔ اگر وہ رام مندر کی حمایت نہیں کریں گے تو انہیں معلوم ہونا چاہیے کہ ہندو اُن سے نفرت کریں گے۔ اگر مسلمانوں کے خلاف ہندوو¿ں کی نفرت بہت بڑھ گئی تو پھروہ نتائج کا تصویر بھی کر سکتے ہیں۔“

یونین وزیر نے رام مندر پر بڑھتے ہوئے تنازع کو سنگین خطرے کی علامت قرار دیتے ہوئے مزید کہا کہ ” اس وقت رام مندر کا معاملہ دوسرے مرحلے میں پہنچ جانے والے کینسر کی طرح بن چکا ہے۔اگر اس کا علاج ابھی نہیں کیا گیا تو پھر یہ مستقبل میں لاعلاج ہوجائے گا۔ “

مزید :

بین الاقوامی -