”پرویز مشرف نے امریکی دباؤ میں آ کر۔۔۔“ عمران خان نے سعودی عرب روانگی سے قبل امریکہ، ایران اور افغانستان کے معاملے پر اپنا موقف دیدیا، ایسی بات کہہ دی کہ ہر کوئی حیران رہ گیا

”پرویز مشرف نے امریکی دباؤ میں آ کر۔۔۔“ عمران خان نے سعودی عرب روانگی سے قبل ...
”پرویز مشرف نے امریکی دباؤ میں آ کر۔۔۔“ عمران خان نے سعودی عرب روانگی سے قبل امریکہ، ایران اور افغانستان کے معاملے پر اپنا موقف دیدیا، ایسی بات کہہ دی کہ ہر کوئی حیران رہ گیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان ایران پر امریکی پابندیاں نہ لگانے کے حق میں ہے۔ جنرل مشرف نے امریکی دباﺅ میں آ کر پاکستان کو امریکی جنگ میں ڈالا اور یہ پاکستان کے رہنماءکی سب سے سنگین غلطی تھی۔ وزیراعظم نہ ہوتا تو امریکی صدر ٹرمپ کے پاکستان بارے بیان پر اپنا موقف دیتا مگر بحیثیت وزیراعظم مجھ پر بہت ذمہ داریاں ہیں۔

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے سعودی عرب روانگی سے پہلے برطانوی نیوزویب سائٹ کوانٹرویو دیا ہے جس میں انہوں نے واضح کیا کہ امریکہ اور ایران کا تنازعہ پر پوری امت مسلمہ کیلئے پریشان کن ہے اور ٹرمپ انتظامیہ ایران کےساتھ مزیدتنازعہ کی طرف بڑھ رہی ہے جبکہ مسلم امہ مزید کوئی انتشار نہیں چاہتی جبکہ پاکستان بھی ایران پر امریکی پابندیاں نہ لگانے کے حق میں ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ جنرل (ر) مشرف نے امریکی دباو¿میں آ کر پاکستان کو امریکی جنگ میں ڈالا جو ایک پاکستانی رہنماءکی سب سے سنگین غلطی تھی۔ ہمارے قبائلی علاقوں میں جو کچھ ہوا وہ خانہ جنگی تھی اور وہاں کے حالات ٹھیک کرنے میں ہمارے اپنے لوگ دربدر ہوئے اور تقریباً 30 لاکھ لوگوں کو اپنا علاقہ چھوڑنا پڑا۔ امریکہ کی جنگ میں ہم نے 80 ہزار لوگوں کی جانیں دیں لیکن اب امریکہ یا کسی کے دباﺅ پر پاکستان میں ایسا دوبارہ نہیں ہونا چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ نے بالآخر تسلیم کر لیا ہے کہ افغانستان کا مسئلہ طاقت سے حل نہیں ہو سکتا اور طالبان سے بات چیت کا آغاز بھی کر دیا ہے جبکہ افغان حکومت اور طالبان دونوں کو ہی پتہ چل گیا ہے کہ ایک دوسرے کو شکست نہیں دی جا سکتی، اس لئے طالبان اور افغان حکومت بہت جلد مشترکہ حل کی جانب آئیں گے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے پاکستان بارے بیان سے متعلق سوال پر وزیراعظم نے کہا کہ ٹرمپ اگر میں وزیراعظم نہ ہوتا تو اپنا موقف دیتا مگر بحیثیت وزیراعظم میری بہت ذمہ داریاں ہیں اور اب یہی کہوں گا جیسا کہ کرکٹ میں وائیڈ بال پر کہا جاتا ہے کہ ویل لیفٹ۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -