کتنے پلیٹ لیٹس انسانی زندگی کیلئے خطرناک ہوسکتے ہیں اور یہ کم ہوجائیں تو کیا ہوتا ہے؟

کتنے پلیٹ لیٹس انسانی زندگی کیلئے خطرناک ہوسکتے ہیں اور یہ کم ہوجائیں تو کیا ...
کتنے پلیٹ لیٹس انسانی زندگی کیلئے خطرناک ہوسکتے ہیں اور یہ کم ہوجائیں تو کیا ہوتا ہے؟

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق وزیر اعظم نواز شریف کو پلیٹ لیٹس کم ہونے کے باعث سروسز ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے، ان کے پلیٹ لیٹس کی تعداد 16 سے 12 ہزار رہ گئی ہے۔ ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ 10 ہزار سے کم پلیٹ لیٹس انسانی زندگی کیلئے خطرہ بن سکتے ہیں۔

ایک صحت مند انسان کے جسم میں ڈیڑھ لاکھ سے 4 لاکھ تک پلیٹ لیٹس ہوتے ہیں ، اگر انسان کے پلیٹ لیٹس کی تعداد ڈیڑھ لاکھ سے کم ہوجائے تو اس صورتحال کو تھرومبو سائٹو پینیا کہتے ہیں ، ایسی صورتحال میں انسان کسی کو خون اور پلیٹ لیٹس عطیہ نہیں کرسکتا ۔اگر پلیٹ لیٹس کی تعداد 10 ہزار یا اس سے کم ہوجائے تو یہ انتہائی کم سطح ہوتی ہے جس کے باعث اندرونی بلیڈنگ کا خطرہ پیدا ہوجاتا ہے۔

خیال رہے کہ نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان خان نے ٹوئٹر پر 2 میڈیکل رپورٹس شیئر کی ہیں جن میں سے ایک سرکاری اور دوسری شریف میڈیکل سٹی کی ہے۔ سرکاری میڈیکل رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ نواز شریف کے پلیٹ لیٹس کی تعداد صرف 16 ہزار رہ گئی ہے جبکہ شریف میڈیکل سٹی کی رپورٹ میں پلیٹ لیٹس کی تعداد 12 ہزار بتائی گئی ہے۔ صحت کی تشویشناک صورتحال کے باعث میاں نواز شریف کو نیب لاہور کے دفتر سے سروسز ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے جہاں میڈیکل بورڈ ان کا طبی معائنہ کر رہا ہے۔

مزید : سیاست /علاقائی /پنجاب /لاہور