آزادی مارچ جعلی مینڈیٹ کیخلاف جہاد ہے میاں فیروزشاہ

آزادی مارچ جعلی مینڈیٹ کیخلاف جہاد ہے میاں فیروزشاہ

  



نوشہرہ (بیورو رپورٹ)پاکستان پیپلز پارٹی نوشہرہ کے ضلعی صدر بیرسٹر میاں فیروزجمال شاہ کاکا خیل نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمان کا آزادی مارچ نااہل سلیکٹیڈ اور نادیدہ قوتوں کے مسلط کردہ جعلی مینڈیٹ کے خلاف جہاد ہے اس کو کامیاب بنانے کیلئے پاکستان پیپلز پارٹی ضلع نوشہرہ اپنے تمام تر وسائل بروئے کار لاکرجمعیت علما اسلام ضلع نوشہرہ کے کارکنوں کے ساتھ ہر ممکن تعاون کرنے کو تیار ہیں جمعیت علما اسلام ایک جمہوریت پسند سیاسی جماعت ہے اور جمعیت علما اسلام نے ہمیشہ ملک میں جمہوری اقدار کو فروغ دینے کیلئے جدوجہد کی ہے ان خیالات کا اظہارانہوں نے اپنی رہائشگاہ پر جمعیت علما اسلام کے ضلعی جنرل سیکرٹری مفتی حاکم علی حقانی کیساتھ ملاقات کے بعد مشترکہ طور پر میڈیا کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے کیا اس موقع پر پی پی کے سید افتخارعلی شاہ، پی کے 61کے سابق امیدوار پیر محمد اسلم، سعود پراچہ جمعیت علما اسلام کے فضل اکبر باچا، ناصر خان یوسفزئی اور عاصم خان علیزئی بھی موجود تھے بیرسٹر میاں فیروز جمال شاہ کاکا خیل نے کہا کہ جس طرح پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زرداری نے پارٹی ورکرز کو ہدایت جاری کی ہے کہ وہ ہر صورت میں جمعیت علما اسلام کے قائد مولانا فضل الرحمان کے آزادی مارچ میں نہ صرف شرکت کریں بلکہ مکمل سپورٹ کریں اسی ہدایات پر من و عن عمل پیرا ہو کر پیپلز پارٹی ضلع نوشہرہ نے ضلعی صدر بیرسٹر میاں فیروز جمال شاہ کاکاخیل، پیر محمد اسلم اور سید افتخار علی شاہ پر مشتمل کمیٹی تشکیل دے دی جو اپنی پارٹی ورکرز سمیت جے یو آئی کے ورکرز اور مقامی قیادت سے رابطے میں رہے گے انہوں نے مزید کہا کہ آزادی مارچ کو کامیاب بنانا وقت کا تقاضا بن چکا ہے کیونکہ عمرانی حکومت نے ملک بھر میں نیب گردی کے زریعے سیاسی مخالفین آصف علی زرداری، محترمہ فریال تالپور، سید خورشید شاہ، مسلم لیگ ن کے قائد میاں نواز شریف سمیت دیگر کو انتقام کا نشانہ بنا کر ثابت کردیا ہے کہ وہ اصل میں ایک خاص ایجنڈے پر آیا ہوا ہے انہوں نے کہا کہ ضلع نوشہرہ خیبر پختونخواہ کی گیٹ وئے ہونے کی وجہ سے مارچ شرکاء کے استقبال کیلئے پبی۔ حکیم آباد اور خیر آباد کے مقام پر استقبالیہ کیمپس لگائیں جائیں گے اور اس کیمپس پر تمام اپوزیشن جماعتوں کے جھنڈے آویزاں ہوگے انہوں نے مزید کہا کہ حکومت رکاوٹیں ڈالنے کی کوشش نہ کریں اگرحکومت نے کسی قسم کی کوئی رکاوٹ ڈالا یا مارچ کے شرکا کو روکنے کی غلطی کی تو یہ اس کی سب سے بڑی غلطی ہوگی کیونکہ ہم ہر روکاوٹ توڑ کر اسلام پہنچے گیاور اگر کسی نے ہمارے قافلوں کو روکا تو پھر ہم بھی پلان Bپر عمل کرنے پر مجبور ہوجائیں گے جس کی تمام ترذمہ داری حکومت وقت پر عائد ہوگی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر