منشیات فروشی کے خلاف مہمند پریس کلب میں ایک روزہ سیمینار کا انعقاد

منشیات فروشی کے خلاف مہمند پریس کلب میں ایک روزہ سیمینار کا انعقاد

  



مہمند (نمائندہ پاکستان) مہمند، منشیات فروشی کے خلاف مہمند پریس کلب میں ایک روزہ سیمینار کا انعقاد۔ اعلیٰ حکام کی خاموشی معنی خیز ہے۔ نوجوان نسل کو تباہی سے بچایاجائے۔ تفصیلات کے مطابق قبائلی ضلع مہمند میں مرستیال فاؤنڈیشن کے تعاؤن سے مہمند پریس کلب میں منشیات فروشی کی روک تھام کیلئے ایک روزہ سیمینار منعقد ہوا۔ جس میں سیاسی، مذہبی و سماجی رہنماؤں، طلباء اور مشران نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ سیمینار کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے جمعیت علمائے اسلام ضلع مہمند کے امیر مولانا مفتی محمد عارف حقانی،مولانا سمیع اللہ، جماعت اسلامی کے رہنماؤں ملک فردوس صافی، نوید خان، پی ٹی آئی کے سجاد خان مہمند، نوید خان، تاجبر خان، مولانا امیر اللہ جنیدی، ملک نثار احمد حلیمزئی، حاجی محمد عالم خان، آل ٹیچرز ایسوسی ایشن کے صدر مرجان علی مہمند، میر افضل خان، مرستیال فاؤنڈیشن کے حمید اللہ، عبداللہ خان، اکبر خان اور مہمند پریس کلب کے صدر فخر عالم مہمند نے کہا کہ قبائلی ضلع مہمند میں ائے روز منشیات فروشی عام ہو رہی ہے۔ مگر ذمہ دار حکام کواس ناسور اوراس دھندے پر خاموش نظر آرہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ منشیات فروشی دہشت گردی سے بھی خطرناک ہے۔ اس کی روک تھام ہم سب کی مشترکہ ذمہ داری ہے۔ مگر موجودہ وقت میں پولیس کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ اس کی روک تھام کو یقینی بنائے۔ کیونکہ ایک طرف غربت اور بے روزگاری نے عوام کا جینا حرام کر دیا ہے تو دوسری طرف منشیات فروشوں نے عوام کا گھیرا تنگ کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ منشیات فروشی کے خلاف ہمارا مہم جاری رہیگا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر