ڈاکٹروں کا ہسپتالوں کی نجکاری کے خلاف احتجاج 27ویں روز میں داخل

ڈاکٹروں کا ہسپتالوں کی نجکاری کے خلاف احتجاج 27ویں روز میں داخل

  



مردان (بیورورپورٹ)ڈاکٹروں کا ہسپتالوں کی نجکاری کے خلاف احتجاج 27ویں روز میں داخل،ضلع بھر کے چھوٹے بڑے ہسپتالوں ہو کا عالم رہا،مریض رل گئے گرینڈ ہیلتھ الائنس کی اپیل پر ڈی ایچ کیو اور ایم ایم سی ہسپتالوں میں تمام شعبے بندرہیں جس کے باعث مریضوں کو شدید مشکلات کاسامنارہا دونوں ہسپتالومیں الگ الگ احتجاجی مظاہرے اور جلسے منعقد ہوئے جس سے جی ایچ اے کے صوبائی چیئرمین ڈاکٹر عالمگیر یوسفزئی، صدر سید روئیدار شاہ،آل پاکستان پیرامیڈیکل سٹاف فیڈریشن کے مرکزی اور جی ایچ اے ضلع مردان کے صدر شرافت اللہ یوسفزئی، پی این اے کو صوبائی رہنما سجاد خان، جی ایچ اے کے صوبائی عہدیدار و صوبائی صدر درجہ چہارم نبی آمین، چیئرمین ڈاکٹر تیمور خان، سینئر وائس چیئرمین تاج محمد، جی ایچ اے ایم ایم سی کے صدر ڈاکٹرآیاز علی شاہ، اختر منیر، عالم زیب، سرتاج معیار، انعام اللہ کے علاوہ پیپلز پارٹی کی رہنما عقیلہ سنبل،انجمن تاجران کے سینئر نائب صدر اورنگ زیب کشمیری جماعت اسلامی کے نعمان یوسف اور اے این پی کے سابق ایم این اے و سابق ضلعی ناظم مردان حمایت اللہ مایارنے خطاب کے دوران حکمرانوں کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ حکومت اصلاحات کے نام پر ہسپتالوں کی نجکاری کے ذریعے پہلے سے مہنگائی کے دلدل میں پھنسے ہوئے غریب عوام سے صحت کی سہولیات بھی چھیننے میں مصروف ہیں اور اصلاحات کے نام پر ڈنڈورا پیٹنے والے نابالغ حکمران آئی ایم ایف سے طے کئے گئے معاہدوں کی آڑ میں سرکاری اداروں خصوصا ہسپتالوں کو بھیچ کر غریب عوام کے ساتھ محکمہ صحت کے ملازمین فاقوں کی طرف دکھیل رہے ہیں۔مقررین نے خبردار کیا حکومت نے فیصلے پر نظرثانی نہ کی تو 25اکتوبر کو جی ایچ اے خیبر پختونخوا،پنجاب اور وفاق کے زیر انتظام ہسپتالوں کے کارکن طویل دھرنا کے ذریعے یوٹرن لینے پر مجبور کردے گی۔جی ایچ کے ضلعی قائدین نے اعلان کیا کہ 25اکتوبر کے اسلام آباد دھرنے کو کامیاب بنانے کے لئے ہزاروں کارکنوں کو اسلام آبا پہنچانے کے لئے حکمت عملی طے کرے گی۔ جلسہ کے احتتام پر حکومت مخالف فلگ شگاف نعروں کی گونج میں شمسی روڈ پر زبردست مظاہرہ کیا۔ مظاہرے کے دوران شمسی روڈ ہر قسم کے ٹریفک کیلئے بندرہا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر