جعلی اکاﺅنٹس کیس،آصف زرداری اور فریال تالپور کے جوڈیشل ریمانڈ میں 12روز کی توسیع

جعلی اکاﺅنٹس کیس،آصف زرداری اور فریال تالپور کے جوڈیشل ریمانڈ میں 12روز کی ...
جعلی اکاﺅنٹس کیس،آصف زرداری اور فریال تالپور کے جوڈیشل ریمانڈ میں 12روز کی توسیع

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)احتساب عدالت نے جعلی اکاﺅنٹس کیس اورپارک لین کیس کی سماعت ملتوی کرتے ہوئے آصف زردای اور فریال تالپور کے جوڈیشل ریمانڈ میں 12روز کی توسیع کر دی۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں سابق صدر آصف زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور کیخلاف جعلی بینک اکاوَنٹس میں میگا منی لانڈرنگ ریفرنس پر سماعت ہوئی،احتساب عدالت کے جج محمد بشیرنے کیس کی سماعت کی،دوران سماعت جج محمد بشیر نے پولیس سے استفسار کیا کہ انور مجید سمیت دیگر ملزمان کہا ں ہیں، پولیس نے عدالت کو بتایا کہ ملزمان جیل میں ہیں ،فاروق ایچ نائیک نے عدالت کو انور مجید کی میڈیکل رپورٹ پیش کرتے ہوئے کہا کہ ان کی طبیعت ناساز ہے اور ڈاکٹرز نے انہیں فضائی سفر سے منع کیا ہوا ہے،جس پر نیب پراسیکیوٹر نے اعتراض اٹھاتے ہوئے کہا کہ ہر بار عدالت کو ایک رپورٹ پیش کر دی جاتی ہے۔

رہنماپیپلز پارٹی آصف زرداری کے وکیل لطیف کھوسہ نے عدالت کو بتایا کہ میڈیکل بورڈ کی رپورٹ کے باوجود آصف زرداری کو ہسپتال منتقل نہیں کیا گیا،جیل حکام سے آج پوچھا جائے کیوں عمل نہیں کیا جا رہا،عدالت نے کہا تھا جیل حکام میڈیکل بورڈ کی سفارشات پر عمل کریں ، عدالت نے زرداری کی جیل سہولیات سے متعلق ایک آرڈربھی کیا تھا۔ انہوں نے مزید کہا کہ عدالت نے آصفہ بھٹوکی توہین عدالت کی درخواست پر رپورٹ مانگی تھی، میں نے آصفہ بھٹو کو روکا ہے،آصفہ بھٹو جذباتی تھیں کہ کیوں عدالتی احکامات پر عمل نہیں ہو رہا۔

لطیف کھوسہ کے دلائل پر نیب پراسیکیوٹر سردار مظفر عباسی نے کہا کہ قانون دیکھنا ہو گا کیا توہین عدالت ہے یا نہیں۔ نیب پراسیکیوٹر کے بولنے پر لطیف کھوسہ نے اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ توہین عدالت جیل حکام نے کی ہے نیب کیوں بول رہا ہے، نیب ریاست کانمائندہ ہے،ریاست توہین عدالت کرنیوالوں کےساتھ نہیں کھڑی ہوتی۔احتساب عدالت نے جعلی اکاﺅنٹس اورپارک لین کیس کی سماعت ملتوی کرتے ہوئے آصف زرداری اور فریال تالپور کے جوڈیشل ریمانڈ میں 12روز کی توسیع کر دی۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد /اہم خبریں