”نیب کی حراست میں نوازشریف فرمائشی کھانے کھاتے رہے اور ۔۔“نجی ٹی وی نے نیب ذرائع کے حوالے سے بڑا دعویٰ کر دیا

”نیب کی حراست میں نوازشریف فرمائشی کھانے کھاتے رہے اور ۔۔“نجی ٹی وی نے نیب ...
”نیب کی حراست میں نوازشریف فرمائشی کھانے کھاتے رہے اور ۔۔“نجی ٹی وی نے نیب ذرائع کے حوالے سے بڑا دعویٰ کر دیا

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)نجی ٹی وی چینل جیونیوز نے نیب ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیاہے کہ نواز شریف نیب لاہور میں حراست کے دوران مکمل طور پر گھر کا فرمائشی کھانا کھاتے رہے اور ذاتی معالج کی تجویز کردہ دوائیں ہی استعمال کرتے رہے۔

نجی ٹی وی کے مطابق کے مطابق نیب نے ترجمان مسلم لیگ(ن) مریم اورنگزیب کی جانب سے لگائے جانے والے الزامات مسترد کر دیئے ہیں، شہباز شریف نے اپنے بڑے بھائی نواز شریف کوہسپتال منتقل ہونے کیلئے آمادہ کیا، نیب کی جانب سے شہباز شریف کی نواز شریف سے ملاقات کی درخواست کوبھی فوری منظورکیا۔ نواز شریف کی گرفتاری کے روز ہی ان کے ذاتی معالج ڈاکٹرعدنان کی ملاقات کروائی گئی،ڈاکٹرعدنان 11 اکتوبرکونواز شریف کے معائنے کیلئے فوراً پہنچے اورتقریباً ایک گھنٹے تک انکا معائنہ کیا،ڈاکٹرعدنان کی دوسری ملاقات 19 اکتوبرکوکروائی گئی جو 30 تا 40 منٹ تک جاری رہی ،ڈاکٹرعدنان اپنے ہمراہ ایکسرے و ای سی جی مشینیں لانا چاہتے تھے جس کی اجازت دی گئی،ڈاکٹر عدنان نے نواز شریف کا تفصیلی معائنہ کیا اورانہیں دی جانیوالی ادویات کا بھی جائزہ لیا۔

نجی ٹی وی کے مطابق نواز شریف نیب لاہور میں حراست کے دوران مکمل طور پر گھر کا فرمائشی کھانا کھاتے رہے،نواز شریف اپنے ذاتی معالج کی تجویز کردہ دوائیں ہی استعمال کرتے رہے،اس دوران نواز شریف نے سرکاری ڈاکٹروں کو معائنہ کروانے سے یکسر انکار بھی کیا،نواز شریف،شریف میڈیکل کی نرسزاورڈاکٹرعدنان سے ہر قسم کے علاج اورادویات پر اصرار کرتے رہے،لیب و دیگر ٹیسٹ کے بعد ڈاکٹرعدنان کی درخواست پرنواز شریف کوہسپتال منتقل کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

مزید : قومی