اشتعال انگیز تقریر کیس، کیپٹن (ر) صفدر جسمانی ریمانڈ کیلئے عدالت میں پیش

اشتعال انگیز تقریر کیس، کیپٹن (ر) صفدر جسمانی ریمانڈ کیلئے عدالت میں پیش
اشتعال انگیز تقریر کیس، کیپٹن (ر) صفدر جسمانی ریمانڈ کیلئے عدالت میں پیش

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آ ن لائن) اشتعال انگیز تقریر اور کار سرکار میں مداخلت میں گرفتار کیپٹن (ر) صفدر کو جسمانی ریمانڈ کیلئے عدالت میں پیش کردیا گیا ۔

کیپٹن (ر) صفدر کو جویشل مجسٹریٹ رانا آصف علی کی عدالت میں پیش کیا گیا ۔ سرکاری وکیل نے عدالت کے روبرو موقف اپنایا کہ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر سے تحقیقات کرنی ہے لہٰذا جسمانی ریمانڈ دیا جائے۔

کیپٹن (ر) صفدر کے وکیل فرہاد علی شاہ ایڈووکیٹ نے موقف اپنایا کہ حکومت نے کیپٹن (صفدر) کی نظر بندی کا نوٹیفکیشن نہیں کیا، کوئی تحریری آرڈر جاری نہیں کیا گیا، ان کے موکل کے خلاف کیس فوری طور پر خارج کیا جائے۔

کیپٹن (ر) صفدر نے عدالت کو بتایا کہ انہیں جب پکڑا گیا تو پتا ہی نہیں چلا کہ کون گرفتار کر رہا ہے اور کیوں گرفتار کیا جارہا ہے، مجھے لگا کہیں مجھے مسنگ پرسن میں تو نہیں ڈالا جا رہا۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور