بادشاہ نے اپنی 34 سالہ محبوبہ کی شاہی حیثیت ختم کردی، وجہ بھی انتہائی حیران کن

بادشاہ نے اپنی 34 سالہ محبوبہ کی شاہی حیثیت ختم کردی، وجہ بھی انتہائی حیران کن
بادشاہ نے اپنی 34 سالہ محبوبہ کی شاہی حیثیت ختم کردی، وجہ بھی انتہائی حیران کن

  



بنکاک(مانیٹرنگ ڈیسک) تھائی لینڈ کے بادشاہ مہا وجیرالونگ کرون نے اپنی 34سالہ محبوبہ کی شاہی حیثیت ختم کردی جس کی وجہ ایسی بتائی گئی ہے کہ سن کر آپ دنگ رہ جائیں گے۔ میل آن لائن کے مطابق مہاوجیرا لونگ کرون نے تین ماہ قبل ہی اپنی اس داشتہ ’سنینات وونگ وجیراپکدی‘ کو شاہی درجہ اور ٹائٹل دیا تھا۔ جس کے لیے ایک روایتی تقریب کا انعقاد کیا گیا اور اس داشتہ نے زمین پر لیٹ کر بادشاہ کے پیروں کو ہاتھ لگایا۔ جب اس تقریب میں اس خاتون اور دیگر افراد کے زمین پر بادشاہ کے سامنے لیٹے ہوئے بنائی گئی تصاویر سوشل میڈیا پر آئی تھیں تو ہر دیکھنے والا دنگ رہ گیا کہ یہ کس طرح کی روایات ہیں جن میں بادشاہ کے سامنے کوئی شخص کھڑا ہو کر نہیں چل سکتا بلکہ اسے پیٹ کے بل رینگ کر چلنا ہوتا ہے۔

اس تقریب میں سنینات کو 67سالہ بادشاہ کی آفیشل داشتہ قرار دیا گیا تھا۔ بہرحال تین ماہ بعد ہی سنینات وونگ وجیرا سے شاہی ٹائٹل واپس لے لیا گیا ہے اور اس کی وجہ اس کی بے وفائی بیان کی گئی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ سنینات بادشاہ سے وفادار نہیں رہی، چنانچہ اس کا شاہی درجہ ختم کر دیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ بادشاہ وجیرا لونگ کرون کو تھائی لینڈ کا ’پلے بوائے بادشاہ‘ کہا جاتا ہے، جس نے داشتاﺅں کے علاوہ چار شادیاں بھی کی ہیں۔ اس نے سنینات کو شاہی ٹائٹل دینے اور سرکاری طور پر اپنی داشتہ بنانے سے بمشکل ایک سال قبل اپنی ملکہ سے شادی کی تھی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس