عدالت نے جاوید لطیف کی ضمانت منسوخی کیلئے درخواست مسترد کردی

عدالت نے جاوید لطیف کی ضمانت منسوخی کیلئے درخواست مسترد کردی

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ کے مسٹرجسٹس انوارالحق پنوں نے ریاست مخالف بیان کے مقدمہ میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنماجاوید لطیف کی ضمانت منسوخی کی پنجاب حکومت کی درخواست مسترد کر دی پنجاب حکومت کی درخواست میں مسلم لیگ (ن) کے ایم این اے جاوید لطیف کی ضمانت منسوخی کی استدعا کی گئی تھی،سرکاری وکیل نے عدالت کوبتایا کہ جاوید لطیف پر پہلی عبوری ضمانت خارج ہونے کا نکتہ چھپانے کا الزام عائدکیاتھا، سرکاری وکیل نے مزید کہا کہ میاں جاوید لطیف کی ضمانت میں سیشن عدالت نے حقائق کو مدنظرنہیں رکھا میاں جاوید لطیف نے سیشن عدالت سے حقائق چھپاکرضمانت لی،غلط بیانی کرنے پرمیاں جاوید لطیف ضمانت کے اہل نہیں رہے جاوید لطیف کیخلاف تھانہ گرین ٹاؤن میں ریاست مخالف بیانات دینے کا مقدمہ درج کیا گیا عدالتی حکم پر جاوید لطیف کے وکیل نے سیشن عدالت سے ضمانت کا تمام ریکارڈ عدالت پیش کردیا گیااورنشاندہی کی کہ تمام حقائق عدالت میں بیان کر دیئے گئے ہیں، عدالت نے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد ضمانت منسوخی کی درخواست خارج کردی۔

درخواست مسترد

مزید :

صفحہ آخر -