بیک ڈور مذاکرات ناکام، عمران خان کا اگلے ہفتے لانگ مارچ کا اعلان کرنے کا فیصلہ

بیک ڈور مذاکرات ناکام، عمران خان کا اگلے ہفتے لانگ مارچ کا اعلان کرنے کا ...
بیک ڈور مذاکرات ناکام، عمران خان کا اگلے ہفتے لانگ مارچ کا اعلان کرنے کا فیصلہ
سورس: Screen Grab

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان کا کہنا ہے کہ ان کے  بیک ڈور مذاکرات ہوئے مگر کوئی نتیجہ نظر نہیں آرہا، وہ جمعہ کو لانگ مارچ کی تاریخ کا اعلان کریں گے۔

بنی گالہ میں سینیٹر اعظم سواتی کی رہائی کے بعد نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ سیاسی جماعتیں تو ہمیشہ بیک ڈور چینل سے مذاکرات کرتی رہتی ہیں۔ وہ انتخابات چاہتے ہیں اس لیے مذاکرات کر رہے ہیں  لیکن  انتخابات کی کوئی امید نظر نہیں آرہی، وہ جمعرات یا جمعےکو لانگ مارچ کی تاریخ کا اعلان کردیں گے، ان کا لانگ مارچ پرامن ہوگا اور کوئی تشدد نہیں ہوگا بلکہ لوگ انجوائے کریں گے۔اس بار وہ بھرپور تیاری کے ساتھ نکلیں گے، عوام کا سمندر جب اسلام آباد پہنچے گا تو انہیں خود ہی معلوم ہوجائے گا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ انہیں  پورا یقین ہے کہ یہ الیکشن نہیں کرائیں گے، اگریہ مجھے پکڑلیں گے توکیا لانگ مارچ نہیں ہوگا،کیا لوگ نہیں نکلیں گے، کیا یہ چاہتے ہیں کہ منظم طور پر احتجاج نہ ہو ، یا یہ چاہتے ہیں کہ  پاکستان سری لنکا کی طرح ہوجائے؟ انہوں نے واضح کیا کہ اگر  منظم احتجاج روکا گیا توملک بند ہوجائےگا، یہ لوگ فیصلہ کرلیں کہ کیا چاہتے ہیں؟

انہوں نے کہا کہ  اعظم سواتی کو اُن کی بیٹی اور نواسی کے سامنے تشدد کا نشانہ بنایا گیا ، اس سے پہلے شہباز گل اور عمران ریاض سمیت دیگر کے خلاف بھی اسی طرح کارروائی کی گئی۔ اعظم سواتی کا  جرم کیا تھا؟ انہوں نے  بڑے آدمی پر تنقید کردی ، سب سے بڑی خوفناک بات یہ ہےکہ گرفتار کرنے والوں نے اعظم سواتی کو کسی اور کے حوالے کیا، چیف جسٹس ایف آئی اے والوں کو  بلائیں اور  پوچھیں اعظم سواتی کو کس کے حوالے کیا تھا جنہوں نے برہنہ کرکے ان پر تشدد کیا۔ 

مزید :

اہم خبریں -قومی -