اغواکاروں کے ہاتھوں خوبصورت دوشیزہ کی دردناک موت

اغواکاروں کے ہاتھوں خوبصورت دوشیزہ کی دردناک موت
اغواکاروں کے ہاتھوں خوبصورت دوشیزہ کی دردناک موت

  

لندن (نیوز ڈیسک)تین ماہ سے گمشدہ ٹریسپ ڈی کینرر کی لاش ڈرم سے ملی۔ یہ کوڑا دان 55 فٹ لمبا پلاسٹک کا بڑا ڈبہ ہے جس میں پورے علاقے کا کباڑ پھینکا جاتا ہے۔ ڈی کینررکا 2 سالہ دوست نے پولیس کو بتایا کہ اس نے 16 جون کو اس سے آخری ملاقات کی تھی اس کے بعد وہ منشیات کے کیس میں جیل بھیج دیا گیا۔ ٹریسپا ڈی کینرر کی لاش کی برآمدگی کے بعد پولیس نے اس کے فلیٹ سے آدھا پیا ہوا سگریٹ، فون کا چارجر اور کچھ دیگر ضروری اشیاء برآمد کیں جن میں سکون آور گولیوں کا ایک پتہ بھی شامل تھا۔ پولیس کے مطابق ایک کوڑے دان سے قابل معروف اشیاء ڈھونڈنے والی خاتون نے ٹریسا ڈی کینرر کی لاش کی اطلاع دی۔ اس کے مطابق کوڑے دان سے آنے والی بدبو مختلف ہے لہٰذا اسے کھلوایا جائے۔ اس کوڑے دان میں ریت اور پرانی عمارت کا ملبہ گرا ہوا تھا اس لئے اس کی تلاشی نہ ممکن تھی لہٰذا پولیس نے ایکسرے مشین کی مدد سے یہاں سکین کروایا جس میں لاش کے پائے جانے کے شواہد ملے۔ ہوسکتا ہے جس مجرم نے لاش یہاں چھپائی ہو اس نے خود ہی اس پر سیمنٹ اور پرانا ملبہ گرادیا ہو تاکہ اس کے جرم پر پردہ پڑا رہے لیکن پولیس اس پر تحقیقات کررہی ہے اور مجرم کوئی نہ کوئی نشانی چھوڑ جاتا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس