وزیر اعظم سے زبردستی استعفیٰ نہیں لیا جاسکتا ، لیاقت بلوچ

وزیر اعظم سے زبردستی استعفیٰ نہیں لیا جاسکتا ، لیاقت بلوچ

  

لاہور(سٹاف رپورٹر)سیکریٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے کہا کہ وزیر اعظم سے زبردستی استعفیٰ نہیں لیا جاسکتا ،دھرنے والوں کو فوج یا کسی اور سے ضمانت مانگنے کی بجائے سیاسی جماعتوں کی قیادت اور پارلیمنٹ کی ضمانت پر اعتماد کرنا چاہئے ۔اگر تمام سیاسی جماعتیں ضمانت دیتی ہیں کہ اگر وزیر اعظم اور ا ن کے ساتھی دھاندلی میں ملوث پائے گئے تو انہیں استعفیٰ دینا پڑے گا اور اگرجوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم کی تحقیقات میں ثابت ہوگیا کہ پنجاب حکومت براہ راست سانحہ ماڈل ٹاﺅن میں ملوث ہے توپھر شہباز شریف کو بھی وزارت اعلیٰ پر متمکن رہنے کا کوئی حق نہیں ۔ تمام سیاسی قائدین نے مسئلہ کے حل کیلئے تدبر کا ثبوت دیتے ہوئے نہایت موثر کردار ادا کیا ہے ۔سیلاب زدگان اور شمالی وزیر ستان کے دس لاکھ متاثرین کی مدد کرنا اور ان کی بحالی کیلئے کوشش کرنا پوری قوم کا اجتماعی فرض ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے بھیکھے وال موڑ لاہور میں لگائے گئے سیلاب متاثرین کیلئے ریلیف کیمپ کے دورہ کے موقع پر میڈیا کے نمائندوں سے خطاب اور صحافیوں کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے کیا ۔

لیاقت بلوچ

مزید :

صفحہ آخر -