واپڈا نے وصولی ریکارڈ برقرار رکھنے کیلئے فی صارفین 150 یونٹ اضافی ڈال دئیے

واپڈا نے وصولی ریکارڈ برقرار رکھنے کیلئے فی صارفین 150 یونٹ اضافی ڈال دئیے ...

                                   فیصل آباد(بیورورپورٹ)باخبر ذرائع کے مطابق پاکستان واپڈا کی بہترین کمپنیوں نے وصولی کا اپنا ریکارڈ برقرار رکھنے کے لئے صارفین بھیجے جانے والے بلوں میں تقریباً 150یونٹ اضافی ڈال دیئے جس سے 300سے کم یونٹ والے گھریلو صارفین کی ریڈنگ بھی 400سے تجاوز کر گئی جس کی وجہ سے 300سے زائد یونٹ والا ٹیرف شروع ہو گیا اور حالیہ ملنے والے بلوں پر شہریوں کی چیخیں نکل گئیں اور وہ پھر ایک مرتبہ بل لیکر سڑکوں پر آنا شروع ہو گئے ذرائع کے مطابق فیسکو نے حالیہ بھیجے جانے والے بلوں میں بے شمار بلوں میں 150یونٹ فی بل اضافی یونٹ ڈال دیئے جس سے گھریلو صارفین جو 300سے کم یونٹ استعمال کرنے کی منصوبہ بندی کر کے بجلی استعمال کر رہے تھے لیکن بلوں میں یونٹ کی تعداد 400سے زائد ہو گئی جس پر 300یونٹ سے کم والا ٹیرف کی بجائے 300سے زائد والا ٹیرف جو ایک یونٹ سے لیکر 301یونٹ تک جانے کے بعد یکساں ہو جاتا ہے جس میں ایوریج تقریباً 17روپے فی یونٹ پڑتا ہے لاگو ہو گیا جس کی وجہ سے شہریوں کے بل ان کی ہمت سے کہیںزیادہ ہو گئے جس پر شہری ایک بار پھر دوباراہ سراپا احتجاج بن گئے ذرائع کا کہنا ہے کہ فیسکو اپنی پوزیشن برقرار رکھنے کیلئے اووربلنگ کر رہا ہے کیونکہ یہاں کے کاروباری اور صنعتی حلقوں پر ن لیگ کی گرفت مضبوط ہونے کے پیش نظر فیسکو کی انتظامیہ کو معلوم ہے کہ اس سلسلہ میں فیصل آباد میں کوئی بھی مﺅثر احتجاج نہیں ہوسکتا۔

واپڈا

 

مزید : صفحہ آخر