علم کے فروغ کے بغیر معاشرے سے ظلم و ناانصافی کو ختم نہیں کیاجاسکتا، ضیاءالحق نقشبندی

علم کے فروغ کے بغیر معاشرے سے ظلم و ناانصافی کو ختم نہیں کیاجاسکتا، ضیاءالحق ...

لاہور(سٹاف رپورٹر)ڈاکٹر عمرانہ مشتاق کی علمی اور قلمی خدمات کو زیادہ سے زیادہ فروغ دےناوقت ضرورت ہے کیونکہ جب تک علم کو فروغ نہیں دیا جائے گا اس وقت تک معاشرے سے تشدد ختم نہیں کیا جا سکتا معاشرے سے ظلم وناانصافی کو ختم کرنے کا واحد حل علم اور کتاب کا فروغ ہے کیونکہ جو قومیں علم اور ریسرچ کو اپنا اوڑھنا بچھونا بنا لیتی ہیں وہ اپنی منزل ضرورحاصل کر لیتی ہیںاس لےے ضروری ہے کہ عمرانہ مشتاق کو پنجاب یونیورسٹی کی جانب سے دی جانے والی پی ایچ ڈی کی ڈگری ملنے پر ان شایان شان تقریب منعقد کی جائے اور ان کی علمی اور قلمی جدوجہد کا معاشرہ کو علم ہو سکے یہ بات الفکر رائٹرزفورم کے صدر محمد ضیاءالحق نقشبندی نے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی انہوں نے کہا کہ اجلاس میں ایک کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیا جو چند دنوں میں اپنی کارکردگی رپورٹ اجلاس میں پیش کرے گی تاکہ جلد از جلد پروگرام کو حتمی اور آخری شکل دی جائے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ پروگرام میں شرکت کے لےے ہر طبقہ فکر کے لوگوں کی حاضری کو یقینی بنایا جائے تاکہ علم کو زیادہ سے زیادہ فروغ مل سکے ۔ 

مزید : میٹروپولیٹن 4