نو سر بازوں نے زہریلی اشیاء کھلا کر 2 افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا متعدد ہسپتال مٰیں داخل

نو سر بازوں نے زہریلی اشیاء کھلا کر 2 افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا متعدد ...

  

لاہور(کرائم سیل)صوبائی دارالحکومت میں نوسربازوں نے زہریلی اشیاء کھلا کر دو افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا جبکہ متعدد کو ہسپتال پہنچا دیا۔پولیس نے شناخت نہ ہونے پر نعشوں کو مردہ خانہ میں پوسٹ مارٹم کے لیے جمع کروا دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق مغلپورہ کے علاقہ سے مقامی رہائشیوں کو ایک 45سالہ شخص کی نعش سڑک کنارے پڑی ہوئی ملی جس پر انہوں نے پولیس کو اطلاع دی اسی طرح سے ہربنس پورہ کے علاقہ سلامت پورہ سے مقامی افراد کو کوڑے کے ڈھیر سے ایک 80سالہ شخص کی نعش ملی ۔پولیس نے دونوں جگہوں پر پہنچ کر جائے وقوعہ سے شواہد اکٹھے کر کے نعشوں کو قبضے میں لے لیا اور شناخت نہ ہونے پر انہیں پوسٹ مارٹم کے لیے مردہ خانہ میں جمع کروا دیا گیا ہے پولیس کے مطابق مقتولوں کی موت کی وجہ ظاہری طور پر زہریلی چیز کھانے کی وجہ معلوم ہوتی ہے البتہ اصل حقائق پوسٹ مارٹم رپورٹ سامنے آنے پر معلوم ہوں گے۔ اس کے علاوہ سول لائن کے علاقہ باغ جناح میں نوسر بازوں نے نشہ آور چیز کھلا کر 35سالہ جمیل خان کو بے ہوش کردیا جبکہ سبزی منڈی کے علاقہ میں 40سالہ نامعلوم ،لوئر مال کے علاقہ میں 30سالہ لیاقت ،کوٹ لکھپت کے علاقہ میں 30سالہ بدر اور بادامی باغ کے علاقہ میں 35سالہ مسلم خان کو نوسربازوں نے نشہ آور چیزیں کھلا کر نقدی ،موبائل فونز سمیت دیگر سامان لوٹ لیا ،متاثرہ افراد کو طبی امداد کے لئے ہسپتال پہنچادیا گیا ۔

مزید :

علاقائی -