سور کی کھال اتارنے سے انکار ، تربیلا توسیعی منصوبے پر کام کرنے والا ملازم برطرف

سور کی کھال اتارنے سے انکار ، تربیلا توسیعی منصوبے پر کام کرنے والا ملازم ...
سور کی کھال اتارنے سے انکار ، تربیلا توسیعی منصوبے پر کام کرنے والا ملازم برطرف

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) سور کی کھال اتارنے سے انکار پر مسلمان کارکن کو ملازمت سے برطرف کر دیا گیا۔ متاثرہ کارکن نے افسوسناک واقعہ سے عوامی لیبر یونین سی بی اے کو تحریری طور پر آگاہ کر دیا ہے ۔تفصیلات کے مطابق تربیلا بجلی گھر کے چوتھے توسیعی منصوبے کے سول ورکس کی کنٹریکٹر ایک غیرملکی فرم کے اہلکار نے سور کو گاڑی کی ٹکر مار کر ادھ موا کرنے کے بعد ان ٹیک پر ڈرلنگ میں مصروف ضیاءاللہ نامی ڈرلر سے کہا کہ وہ اسکی کھال اتار کر گاڑی میں رکھ دے۔ ضیاءاللہ نے اسے جواب دیا کہ وہ مسلم ہونے کی حیثیت سے یہ قبیح فعل انجام نہیں دے سکتا۔ اہلکار ڈرلر کے منہ سے انکار سن کر آگ بگولا ہو گیا اور موقع پر ہی ڈرلر کو ملازمت سے برطرفی کا حکم سنا دیا۔

مزید : اسلام آباد