دوا ساز کمپنی کی ڈا کٹروں کو رشوتیں،چین نے سبق سکھا دیا

دوا ساز کمپنی کی ڈا کٹروں کو رشوتیں،چین نے سبق سکھا دیا
دوا ساز کمپنی کی ڈا کٹروں کو رشوتیں،چین نے سبق سکھا دیا

  

بیجنگ(نیوزڈیسک)چین نے جی ایس کے کمپنی کو اپنی دوائیاں لکھوانے کے لئے ڈاکٹروں کو رشوت دینے کی پاداش میں تین بلین یان جو 489 ملین امریکی ڈالر بنتے ہیں کی رقم کا جرمانہ کر دیا ہے جس سی برطانوی ادویہ سیلز کمپنیوں کے ایک نقصان دہ باب کا خاتمہ ہوا۔تفصیلات کے مطابق چنکشا کی عدالت جی ایس کے کے سابق ڈائریکٹر اور چار دوسرے جی ایس کے ایگزیکٹو کو چین میں پچھلے دو سے چار سال کے عرصہ میں گرفتار کرکے جیل بھیج چکی ہے، جس سے یہ بات واضح ہوتی ہے کہ چینی ریگولیٹراتھارٹیز کس تیزی سے کارپوریٹ بدعنوان شخصیات کے خلاف کریک ڈاﺅن کررہی ہے اس کے بعد اگر جی ایس کے سبق سیکھ لے اور ایسی غیر قانونی ہتھکنڈہ سے باز رہتی ہے تو ایک بار پھر چینی حکومت کی نظروں میں اس کا بھروسہ قائم ہو سکتا ہے۔جی ایس کے کو کیا گیا جرمانہ 2013ءمیں اس کے کمائے ہوئے منافع کا تقریبا چار فیصد ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -