عید الاضحٰی کی آمد ،بازاروں میں گہما گہمی ،خواتین مہنگائی سے پریشان

عید الاضحٰی کی آمد ،بازاروں میں گہما گہمی ،خواتین مہنگائی سے پریشان

  



لاہور( سروے رپورٹ: دیبا مرزا سے)عیدا لاضحی کی آمد کے سا تھ ہی شہر بھر کے بازاروں میں خواتین خریداروں کا رش دکھا ئی دینے لگا ۔صوبائی دارالحکومت کے مشہور بازار لبرٹی ، انارکلی ، اچھرہ ،بانو مارکیٹ، بھگوان پورہ و دیگر بازاروں میں عید سٹالز سج گئے ، گھریلو خواتین کی بڑی تعداد اشیاء خوردونوش میں ہوشربا اضا فے سے پریشان ہیں جبکہ دوسری جانب مہنگا ئی کے با وجود خواتین اپنی اور بچوں کی خریداری میں مصروف ہیں ، خواتین کا کہنا ہے کہ عید الاضحی ہمارا مذ ہبی تہوار ہے اسے جوش وخروش سے منا نا چاہیے ، مہنگا ئی نے اگر چہ عوام کی کمر توڑ ر کھی ہے لیکن اسلا می روایات کی پا سداری ہر مسلمان کا فرض ہے،خواتین نے کہامہنگا ئی کے ہا تھوں مجبور ہیں لیکن بچوں کے لئے خریداری توکر نی ہے ، گھریلو اشیاء صرف میں عید کی آمد سے قبل ہی ہو شربا اضا فہ کر دیا گیا ہے ۔مصنو عی قلت پیدا کر کے ذخیرہ اندوزوں کی تو چا ند ی ہو گئی اور غریب عوام لٹنے پر مجبور ہیں۔عائشہ بی بی، انعم، سعدیہ بی بی ، روبینہ، عالیہ، رسولاں بی بی، صغراں حنا نے ’’پاکستان سروے‘‘ میں گفتگو کر تے ہو ئے کہا کہ ابھی تو عید میں کئی روز با قی ہیں لیکن دکانداروں و سبزی فروشوں نے ابھی سے ہی قیمتوں میں ہو شربا اضا فہ کر دیا ہے ٹما ٹڑ ،پیا ز، مصا لحہ جات کی قیمتوں کو دو گناہ کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ غریب ہوں یا امیر عید تو سب نے ہی منا نی ہے انہوں نے کہا کہ مہنگائی کا رونا توکئی سالوں سے روتے آرہے ہیں لیکن تہوار منا نا بھی تو ضروری ہے پہلے توخوشی خوشی تہورواں پر خریداری کی جا تی تھی لیکن اب تو مجبوری ہے اقراہ ،انعم اور رقیہ نے کہا کہ مہنگا ئی تو ہے لیکن یہ ہمارا مذ ہبی تہوار ہے اس لئے اپنی حیثیت کے مطا بق تو ضرور منا ئیں گے انہوں نے کہا کہ اگر مہنگائی کی با ت کی جا ئے تو جو کپڑا آج سے پہلے ایک ہزار کا ملتا تھا آج وہ دو ہزار میں مل رہا ہے اس طرح چوڑیوں کا اچھا سیٹ پہلے ایک سو میں مل جا تا تھا اب وہ دو سے چار سو میں ملتا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...