میرے بیٹے نے دشمن کو بطخ بنا کر مارا ،فیاض بخاری

میرے بیٹے نے دشمن کو بطخ بنا کر مارا ،فیاض بخاری

  



لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک )بڈھ بیر ائیر بیس حملے میں شہید ہونے والے کیپٹن اسفند یار بخاری کے والد فیاض بخاری نے کہا ہے کہ میرے بیٹے نے دشمن کو بطخ بنا کر مارا ہے اور اس نے دشمن کو مذموم مقاصد میں کامیاب نہ ہو نے دیا۔دنیا نیوز کے پروگرام ’’نقطہ نظر ‘‘میں سینئر صحافی اور تجزیہ نگارمجیب الرحمان شامی سے گفتگو کرتے ہوئے فیاض بخاری نے بتایا حملے کے دن اسفند کی ڈیوٹی نہ تھی لیکن جب بڈھ بیر ائیر بیس پر حملہ ہوا تو اسفند یار نے خود آگے بڑھ کر دشمن کو روکنے کا ارادہ ظاہر کیا اور فوری رسپانس دے کر دشمن کو رہائشی ایریا میں جانے سے روک دیا۔حملے کے دوران اپنے افسران سے گفتگو کرتے ہوئے اسفند یار بخاری نے کہا کہ دشمن نے حملہ کردیا ہے اور اب دشمن رہائشی علاقے کی طرف جانا چاہتا ہے لیکن میں ان کے سامنے دیوار بنا دوں گا اور انہیں بطخ بنا کر ماروں گا اور مزید پیش قد می کرنے نہیں دوں گا۔دہشت گرد ہماری لاشوں پر سے گزر کر ہی کالونی میں داخل ہو سکتے ہیں۔والد کا کہنا تھا کہ اسفند یار بخاری نے جو اپنے افسران سے کہا بالکل ویسا ہی کر کے دکھا یا اور دشمن کو کالونی میں جانے نہیں دیااور پچاس میٹر کے اندر ہی دشمنوں کو گھیر لیا اور اگر ایسا نہ ہوتا تو دہشت گرد کالونی میں گھس کر بچوں، عورتوں، بوڑھوں سمیت سب کا قتل عام کرتے۔ فیا ض بخاری نے کہا کہ دہشت گردی کی وجہ سے پورے ملک میں صف ماتم ہے اور بہت سے لوگوں نے اس جنگ میں اپنی قربانیاں پیش کی ہیں۔جان تو آنی جانی چیز ہے اس کی کوئی اوقات نہیں ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ اسفند یار جیسا بچہ صدیوں میں پیدا ہوتا ہے۔اسفند یار نے مجھے ساری زندگی خوشیاں دی ہیں۔

مزید : صفحہ اول


loading...