دہشتگردی پوری دنیا کا مسئلہ ہے ، پاک بھارت وزراء اعظم تعمیری مذکرات کا آغاز کریں ، امریکہ

دہشتگردی پوری دنیا کا مسئلہ ہے ، پاک بھارت وزراء اعظم تعمیری مذکرات کا آغاز ...

  



واشگنٹن؍نئی دہلی (آن لائن،اے این این) امریکہ کی جنوبی و وسطی ایشیاء کی معاون سیکرٹر ی خارجہ نیشا ڈیسائی بسوال نے کہاہے کہ نیویارک میں پاک بھارت وزراء اعظم ملاقات کے لئے دباؤ ڈالنے کا تاثر درست نہیں،دونوں ملک نواز مودی ملاقات کے لئے مناسب وقت اور جگہ کا تعین خود کریں ہم بات چیت کی حوصلہ افزائی کرینگے،امریکہ کی خواہش ہے کہ دونوں پڑوسی ملکوں کے درمیان اچھے تعلقات ہوں اور مسائل کو بامعنی مذاکرات سے حل کیا جائے۔بھارتی سرکاری خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ یہ تاثر درست نہیں کہ امریکہ نیویارک میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے70ویں سربراہی اجلاس کے دوران پاک بھارت وزراء اعظم ملاقات کے لئے دونوں ملکوں پر دباؤ ڈال رہا ہے۔ انھوں نے کہا کہ یہ بات درست ہے کہ امریکہ دونوں پڑوسی ملکوں کے درمیان اچھے تعلقات کا خواہش مند ہے اور پاکستان اور بھارت کے درمیان تصفیہ طلب مسائل کا پر امن مذاکرات کے ذریعے حل چاہتا ہے۔پاکستان اور بھارت وزراء اعظم سطح کی ملاقات کے لئے مناسب وقت اور مقام کا تعین خود کریں امریکہ بات چیت کی حوصلہ افزائی کرے گا۔ہم چاہتے ہیں کہ دونوں ملکوں کے سربراہان تعمیری مذاکرات کا آغاز کریں ۔ہمیں پاک بھارت قومی سلامتی کے مشیروں کی سطح کے مذاکرات منسوخ ہونے پر مایوسی ہوئی ۔انہوں نے کہاکہ دونوں ملکوں میں سلامتی ، استحکام اور خوشحالی کیلئے مضبوط تعلقات کی ضرورت ہے ۔انہوں نے کہاکہ اچھے اور برے دہشتگردوں کی تمیز کئے بغیرہمیں ہر قسم کی دہشتگردی اور دہشتگردوں کے تمام گروپس کے خلاف غیر مبہم موقف اختیار کرنا ہوگا۔دہشتگردی کسی ایک ملک کا نہیں پوری دنیا کا مسئلہ ہے ۔یاد رہے کہ وزیراعظم میاں محمد نوازشریف اور ان کے بھارتی ہم منصب کے درمیان اقوام متحدہ جنرل اسمبلی اجلاس کے دوران ملاقات کا امکان ہے ۔

مزید : علاقائی