لاہور ایئر پورٹ پر سکینر خراب ، مسافروں کی کلیئرنس کیلئے منہ مانگے دام دینے پر مجبور

لاہور ایئر پورٹ پر سکینر خراب ، مسافروں کی کلیئرنس کیلئے منہ مانگے دام دینے ...

  



لاہور(ارشد محمود گھمن) علامہ اقبال انٹر نیشنل ائرپورٹ بیرون ممالک سے آنے اورجانے والے مسافروں کے سازوسامان کی چیکنگ کے دوران سکینرز مشین کے خراب ہونے کا انکشاف ہوا ہے ۔آنے جانے والے مسافرین ائرپورٹ عملہ کے ہاتھوں یرغمال ہونے پر مجبور۔منہ مانگے دام وصول کرکے سامان کی کلیرنس کرنے لگے۔ جبکہ پی آئی اے اورشاہین ائرلائن کے شیڈول متاثر ہونے کی وجہ سے پہلے ہی مسافروں میں بے چینی پائی جاتی ہے ۔باوثوق ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ علامہ اقبال انٹرنیشنل ائرپورٹ پرموجود ائر پورٹ عملہ مسافروں کی اپنے من پسند طریقوں سے کلئیرنس کر تا ہے جس کے باعث مسافر عملہ کے خلاف سراپا احتجاج بن گئے ہیں۔کسٹم حکام کی طرف سے مسافروں کی چیکنگ کیلئے استعمال ہونے والے آلات اورسکینرز مشینیں نا قابل استعمال ہو چکی ہیں۔ذرائع نے مزید بتا یا ہے کہ پاکستان انٹرنیشنل ائر لائن کے جہازوں میں بیرون ممالک سفر کر نے والے مسافروں کو دوران سفرناقص کھانا اور دیگر ریفرشمنٹ مہیا کی جاتی ہے۔ اورائرہوسٹس کی طرف سے بھی مسافروں پر کوئی خاطر خواہ طریقے سے انٹرٹینمنٹ کا سامان مہیا نہیں کیا جاتاہے یہاں تک کہ مسافروں کے ساتھ ناروا رویہ روا رکھا جاتا ہے۔علاوہ ازیں ذرائع کا کہنا ہے کہ پی آئی اے اورشاہین ائرلائن کے ناکارہ جہازوں میں آئے دن فنی خرابی کے باعث روزمرہ کے پروازوں شیڈول تبدیل کر کے 8سے10گھنٹے خوار کرنا ان کا وطیرہ بن چکا ہے ۔مسافروں نے وزیر اعظم سے فوری طورپر ان کے اعلیٰ افسران کے خلاف ایکشن لے کر فوری کاروائی کرکے اس نظام کو صحیح معنوں میں عملی جامہ پہنایا جائے۔

مزید : علاقائی