ایک تھپڑ اور سعودی عرب میں غیرملکی خاتون نرس کی عید سے پہلے ’عید‘ ہوگئی

ایک تھپڑ اور سعودی عرب میں غیرملکی خاتون نرس کی عید سے پہلے ’عید‘ ہوگئی
ایک تھپڑ اور سعودی عرب میں غیرملکی خاتون نرس کی عید سے پہلے ’عید‘ ہوگئی

  



ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب میں غیرملکی نرس کو تھپڑمارنا سعودی شہری کو مہنگاپڑگیا اور دوسالہ قید سے بچنے کیلئے سے بچنے کیلئے مذکورہ خاتون کو پچاس ہزار ریال (تقریباً14لاکھ پاکستانی روپے) دینا پڑے ۔

عرب میڈیا کے مطابق سعودی عرب کے جنوبی صوبہ جزان کی عدالت نے 39سالہ شخص کو معاملات سلجھانے کی مہلت دی تھی یا پھر دوسال کیلئے جیل بھیجنے کا حکم دیدیا۔ ملزم نے خاتون کو پچاس ہزار سعودی ریال بطور ہرجانہ دینے کی پیشکش کی جس پر اس نے کیس واپس لینے پر رضامندی ظاہر کردی۔

نرس کی شناخت ظاہر کیے بغیر روزنامہ ’الوطن‘ نے لکھاکہ نرس کو مقامی شخص نے ہسپتال کے عملے کے ساتھ تھپڑدے ماراتھا جبکہ دونوں میں تکرار بھی ہوالیکن بعد میں خاتون نے شکایت درج کرادی ۔ یادرہے کہ سعودی عرب میں 24ستمبر کو عیدالاضحی منائے جانے کا امکان ہے اور بڑی تعداد میں غیرملکی خواتین ومرد سعودی عرب میں روزگار کے سلسلے میں موجود ہیں۔

مزید : جرم و انصاف


loading...