”تمہارا باپ دراصل تمہارا۔۔۔“ خاتون کو ماں نے خط میں ایسی شرمناک بات لکھ دی کہ زندہ رہنا مشکل ہو گیا

”تمہارا باپ دراصل تمہارا۔۔۔“ خاتون کو ماں نے خط میں ایسی شرمناک بات لکھ دی ...
”تمہارا باپ دراصل تمہارا۔۔۔“ خاتون کو ماں نے خط میں ایسی شرمناک بات لکھ دی کہ زندہ رہنا مشکل ہو گیا

  



میلبرن(مانیٹرنگ ڈیسک) قربِ قیامت ہی ہے کہ کچھ عرصے سے تواتر کے ساتھ مختلف ممالک سے سگے باپ کے ہاتھوں بیٹیوں کی عصمت دری کی خبریں میڈیا میں گردش کر رہی ہیں۔ ایسی ہی ایک دل دہلا دینے والی خبر آسٹریلیا سے آئی ہے جہاں ایک باپ نے4دہائیاں قبل اپنی ہی بیٹی کو گن پوائنٹ پر جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا اور اس خاتون نے اپنے ہی باپ کی بیٹی کو جنم دے دیا تھا۔ آج وہ بیٹی جوڈی کاہل 38سال کی ہو چکی ہے۔

ایک موبائل ایپ جو آپ کو بڑے دھوکے سے بچا سکتی ہے

آج سے 4سال قبل جوڈی کو اپنی ماں کی طرف سے ایک خط موصول ہوا جس میں اس نے جوڈی کو وہ بات بتا دی جو آج تک اس سے چھپائے رکھی تھی۔ اس نے جوڈی کو لکھا کہ تم دراصل اپنے ہی نانا کی بیٹی ہو۔جوڈی کی ماں نے تفصیل سے بتایا کہ کس طرح اس کا اپنا ہی والد”ریمنڈ“ اسے سالوں تک جنسی زیادتی کا نشانہ بناتا رہا۔

جوڈی خط پڑھ کر اندر سے ٹوٹ گئی اور اس نے خودکشی کا فیصلہ کر لیا لیکن اس پر عمل نہ کر سکی لیکن اس کا اس کی دماغی صحت پر اس قدر اثر ہوا کہ ڈپریشن کی وجہ سے اس کی بھوک بالکل ختم ہو کر رہ گئی اور اس کا وزن محض 34کلوگرام رہ گیا، جس سے وہ ہڈیوں کا ڈھانچہ بن گئی۔جوڈی کا کہنا ہے کہ جب میں نے اپنی ماں کے یہ لفظ پڑھے کہ ”تمہارا اور میرا باپ ایک ہی ہے“ تو مجھے ایک شدید جھٹکا لگا اور میں اپنے آپ سے ہی نفرت کرنے لگی۔ اس رات میں نے پل سے کود کر خود کشی کی کوشش کی۔ مجھے سمجھ نہیں آ رہی تھی کہ میں کیا کروں۔

متحدہ عرب امارات کی عدالت میں ایک ایسے مقدمے کی سماعت جس کی تفصیلات جان کر ہی سوشل میڈیا صارفین کی نیندیں اڑ جائیں

جوڈی کا کہنا تھا کہ میری ماں مجھ سے بہت نفرت کرتی تھی، اس نے کئی بار مجھے مارڈالنے کی دھمکی دی۔ وہ اکثر بیمار رہتی تھیں اور انہیں آئے روز ہسپتال میں داخل کروانا پڑتا تھا، میں انہیں ذہنی مریض سمجھتی تھی۔ آج مجھے سمجھ آیا کہ وہ مجھ سے نفرت کیوں کرتی تھیں اور ان کے مسلسل بیمار رہنے کی اصل وجہ کیا تھی۔ وہ جب بھی مجھے دیکھتی تھیں تو انہیں وہ سب کچھ یاد آ جاتا تھا جو ماضی میں ان پر بیت چکا تھا، اسی لیے وہ شاید مجھے نہیں دیکھنا چاہتی تھیں۔جوڈی نے بتایا کہ میری تمام تر پرورش میری نانی نے کی تھی۔

جوڈی نے چار سال بھوکا پیاسا، انتہائی کرب و اذیت میں رہنے اور زندگی سے موت طلب کرنے میں گزار دیئے اور بالآخرچند روز قبل اس نے رائل میلبرن ہسپتال میں دم توڑ دیا۔ جوڈی نے مرنے سے قبل کہا کہ میں اپنی کہانی اس لیے لوگوں کے سامنے لا رہی ہوں تاکہ آئندہ کوئی سفاک باپ اپنی اولاد کے ساتھ اس طرح کی درندگی نہ کرے۔

دبئی کے نوجوان شہزادے کی موت کی کیا وجہ بنی؟برطانوی اخبار نے شرمناک دعویٰ کر دیا،ہنگامہ برپا کر دیا

مزید : ڈیلی بائیٹس