سولہ سال تک کے بچوں کو نجی سکولوں میں بھی مفت تعلیم دلوائی جائے ،ہائی کورٹ میں درخواست دائر

سولہ سال تک کے بچوں کو نجی سکولوں میں بھی مفت تعلیم دلوائی جائے ،ہائی کورٹ ...
 سولہ سال تک کے بچوں کو نجی سکولوں میں بھی مفت تعلیم دلوائی جائے ،ہائی کورٹ میں درخواست دائر

  



لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائی کورٹ مےںنجی سکولوں میں بھی 5سے 16سال کی عمر تک کے بچوں کو مفت تعلےم کی فراہمی کے لئے درخواست دائر کردی گئی ہے ۔جوڈےشل اےکٹےوزم پےنل کی طرف سے دائر اس درخواست میں موقف اختےار کےا گیاہے کہ آئےن کے آرٹےکل25-Aکے تحت حکومت نے 5سے 16سال کے بچوں کو مفت تعلےم فراہم کرناہے مگر حکومت پنجاب اس ذمہ داری مےںپورا نہےں اتر سکی پرائےوےٹ سکولز نے تعلےم کو انڈسٹری بنالےاہے فےسوں کے نام پر لوٹ مار کی جارہی ہے نہ صرف سکولوں کی فےسوں مےں بلکہ سکول کے ےونےفارم اور کتابوں کی شکل مےں بھی لوٹ مار جاری ہے حکومت پنجاب نے دانش سکولوں مےں قوم کا اربوں روپےہ ضائع کردےا اور عام آدمی مفت تعلےم سے محروم رہا تعلےم کا سارا پےسہ مےٹرو پراجےکٹ اور اوورنج لائن ٹرےن مےں لگادےا گےا عدالت سے گزارش کی گئی ہے کہ آئےن کے آرٹےکل 25-Aکونافذ کرےں اور 5سے 16سال تک کے بچوں کو مفت تعلےم فراہم کی جائے پرائےوےٹ سکولوں کو بھی مفت تعلےم فراہم کرنے کی پابندی کرے اور سکول ےونےفارم اورسلےبس اےک طرح کا ہو اور پنجاب کے تمام پرائےوےٹ تعلےمی اداروں سے مفت تعلےم فراہم کرنے اور ان کے آڈےٹڈ اکاﺅنٹ طلب کرے ۔اس درخواست کی سماعت آج23ستمبر کو مسٹر جسٹس ساجد محمود سےٹھی کرےں گے ۔

مزید : لاہور