ہائی کورٹ کے حکم پر سی سی پی او نے دو اتھرے ایس ایچ او گرفتار کرکے پیش کردیئے

ہائی کورٹ کے حکم پر سی سی پی او نے دو اتھرے ایس ایچ او گرفتار کرکے پیش کردیئے
 ہائی کورٹ کے حکم پر سی سی پی او نے دو اتھرے ایس ایچ او گرفتار کرکے پیش کردیئے

  



لاہور (نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ کے حکم کے باوجود پیش نہ ہونے پرسی سی پی او لاہورنے تھانہ سول لائینز اور تھانہ گارڈن ٹاﺅن کے ایس ایچ اوز کو گرفتار کر کے عدالت میں پیش کر دیا۔ دونوں پولیس افسران نے خود کو عدالتی رحم و کرم پر چھوڑتے ہوئے غیر مشروط معافی مانگ لی۔ عدالت نے ریمارکس دیئے کہ آئندہ حکم عدولی ہوئی تو رعایت کی توقع نہ رکھی جائے ،مسٹر جسٹس محمود مقبول باجوہ نے یوسف احد ملک کی درخواست پران ایس ایچ اوز کو طلب کیا تھا ۔ درخواست گزار کا کہنا تھا کہ پولیس اس کے خلاف مقدمات درج کر رہی ہے حالانکہ اس کا معاملہ نیب کے پاس زیر التواءہے ، نیب میں معاملہ ہونے کی وجہ سے پولیس مقدمہ درج نہیں کر سکتی۔ عدالتی حکم کے باوجود تھانہ سول لائینز اور تھانہ گارڈن ٹاﺅن کے ایس ایچ اوز پیش نہ ہوئے جس پر عدالت نے شدید برہمی کا ظہار کرتے ہوئے سی سی پی او لاہو ر کو دونوں ایس ایچ اوز کو گرفتار کر کے 12بجے تک پیش کرنے کا حکم دیا۔ بعد ازاں سی سی پی او نے دونوں افسران کو عدالت میں پیش کر دیا۔ دونوں افسران نے خود کو عدالتی رحم و کرم پر چھوڑتے ہوئے غیر مشروط معافی طلب کی جس پر عدالت نے انہیں آئندہ محتاط رہنے کی ہدایت کرتے ہوئے قرار دیا کہ اگر آئندہ حکم عدولی ہوئی تو عدالت سے کسی رعایت کی توقع نہ رکھی جائے۔ عدالت شہریوں کے حقو ق کی محافظ ہے جس پر سمجھوتہ نہیں کیا جا سکتا۔ عدالت نے درخواست نمٹاتے ہوئے پولیس کو یوسف احد ملک کو ہراساں کرنے سے روک دیا

مزید : لاہور


loading...