باجوڑ ایجنسی ،پاسپورٹ آفس 8 سالوں سے بند ،عوام کو مشکلات

باجوڑ ایجنسی ،پاسپورٹ آفس 8 سالوں سے بند ،عوام کو مشکلات

باجوڑ ایجنسی (نمائندہ پاکستان)باجوڑ ایجنسی پاسپورٹ آفس گزشتہ آٹھ سال سے بند ۔ شہریوں کو مشکلات کا سا منا۔تفصیلات کے مطابق باجوڑ ایجنسی میں پاسپورٹ آفس گزشتہ آٹھ سال سے بند ہے جس سے شہریوں کو کافی مشکلات درپیش ہیں لوگ پاسپورٹ بنانے کے سلسلے میں سینکڑوں کلومیٹر دور ضلع دیر جانے پرمجبور ہیں اخبار سے بات چیت کرتے ہوئے ایک شہری حاجی نیاز محمد نے بتا یا کہ آفس میں موجود جنریٹر ذنگ آلود جبکہ سٹیشنری اور سامان خراب ہو چُکا تھا جس کو گزشتہ روز پشاور سے آئے ہوئے پاسپورٹ آفس کے اہلکاروں نے اس کو ٹھیک کرنے کے بہانے مُنتقل کیا اُنہوں نے کہا کہ چونکہ ایجنسی کے ذیادہ تر لوگ ملک سے باہر محنت مزدوری کے لئے جارہے ہیں آفس کا ایجنسی میں نہ ہونے سے اُن کو کافی مشکلات درپیش رہتے ہیں اور ضلع دیر میں آفس ہونے کیوجہ سے ایجنسی کے عوام بار بار وہاں جاتے ہیں جس سے مالی خرچے کیساتھ اس کا قیمتی وقت بھی ضائع ہو رہا ہوتا ہے تحصیل خار کے ایک اور شہری محمد شاہ کا کہنا تھا کہ ایجنسی میں امن و امان قائم ہے اور یہاں نادرا آفس کیساتھ درجنوں این جی اوز کام کر رہی ہیں تو پاسپورٹ آفس کو ایجنسی کے امن و امان کیساتھ مشروط کرنا مسئلے سے آنکھیں چرانے کے مترادف ہے ملک شہاب الدین نے باجوڑ ایم این ایز سے مطالبہ کیا کہ وہ وزیر داخلہ چوہدری نثار سے ملاقات کرکے ایجنسی کے عوام کا دیرینہ مسئلہ حل کرنے کیلئے کوششیں کریں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...