ؑؑعرب ملک میں جنسی طور پر ہراساں کرنے کے الزام میں پکڑے جانے پر بھارتی شہری کا ایسا موقف کہ کسی کو بھی اعتبار نہ آئے

ؑؑعرب ملک میں جنسی طور پر ہراساں کرنے کے الزام میں پکڑے جانے پر بھارتی شہری ...
ؑؑعرب ملک میں جنسی طور پر ہراساں کرنے کے الزام میں پکڑے جانے پر بھارتی شہری کا ایسا موقف کہ کسی کو بھی اعتبار نہ آئے

  


جدہ(مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی شہر الرفا میں جنسی ہراسگی کا مقدمے میں انتہائی دلچسپ موڑ آگیا۔ خاتون کو ہراساں کرنے کے ملزم نے عدالت کے سامنے اعتراف تو کرلیا لیکن یہ موقف بھی اپنایا کہ جو بھی ہوا،دانستہ نہیں بلکہ غلطی سے ہوا۔

خلیج ٹائمز کے مطابق مقامی عدالت نے اٹھائیس سالہ فلپائنی خاتون اکاؤنٹنٹ کی درخواست کی سماعت کی۔ خاتون کی جانب سے الزام عائد کیا گیا تھا کہ رواں سال پندرہ مئی کو وہ اپنے معمول کے مطابق آفس ٹائم کے بعد بھی کام کررہی تھی کہ اسی دوران وہ اپنا پرس اور لیپ ٹاپ اٹھانے دفتر کی نویں منزل پر گئی لیکن دروازہ بند تھا۔ خاتون کے مطابق اس نے صفائی کرنے والے بھارتی ملازم سے چابی کے متعلق دریافت کیا تو اس نے دروازہ کھول دیا پھر اس کے ساتھ ہی اندر داخل ہوگیا اور اسے چھُو کرجنسی طور پر ہراساں کرنے لگا۔ مدعیہ کے مطابق جب اس نے ملزم کو ٹوکا تووہ معذرت کرنے لگا۔خاتون نے پہلے آفس کے گارڈ کو واقعہ سے آگاہ کیا پھر اپنے سینیئر کو بتایا جس کے بعد معاملہ پولیس تک پہنچ گیا۔

پولیس نے بھارتی ملازم کو عدالت میں پیش کردیا جہاں اس نے واقعہ کا اعتراف تو کرلیا لیکن یہ موقف بھی اختیار کیا کہ اس کی کوہنی غلطی سے خاتون کے جسم  سے ٹکرا گئی تھی، لہذا جو بھی ہوا،غیر ارادی طور پر ہوا۔ کیس کا فیصلہ چھبیس اکتوبر کو سنایا جائے گا۔

مزید : عرب دنیا


loading...