نوازشریف کے کزنز کی شوگر ملوں کی درخواستیں نمٹاتے ہوئے معاملہ  کمشنر ان لینڈزریونیو کو بھجوا دیاگیا

نوازشریف کے کزنز کی شوگر ملوں کی درخواستیں نمٹاتے ہوئے معاملہ  کمشنر ان ...

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے میاں نواز شریف کے کزنز کی حسیب وقاص شوگر ملز اورعبداللہ شوگرملزکی درخواستیں نمٹاتے ہوئے معاملہ کمشنر ان لینڈز ریونیو کو بھجوادیاہے جسٹس عائشہ اے ملک نے دونوں درخواستوں کی الگ الگ سماعت کرتے ہوئے کمشنر ان لینڈ ریونیو کو ہدایت کی کہ معاملے کا جائزہ لے کر قانون کے مطابق فیصلہ کیاجائے حسیب وقاص شوگر ملز کی درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا تھا کہ ڈپٹی کمشنر ان لینڈ ریونیو نے 13 کروڑ 98 لاکھ 19 ہزار 427 روپے کا سیلز ٹیکس ریکوری کا نوٹس بھجوایا ہے  ایف بی کے نوٹسز آئین کے آرٹیکل 10 (اے)کی خلاف ورزی ہے درخواست میں یہ نشاندہی کی گئی کہ 2017 ء کے سیلز ٹیکس ریکوری کا اظہار وجوہ نوٹس کیخلاف اپیل بھی زیر سماعت ہے لیکن اس کے باوجود ایف بی آرکی طرف سے ہراساں کیا جارہاہے  درخواست میں استدعا کی گئی تھی کہ سیلز ٹیکس ریکوری نوٹس کو غیر قانونی قرار دے کر کالعدم کیا جائے،عبداللہ شوگر ملز کی طرف سے موقف اختیار کیا گیا کہ ایف بی آر نے 2017ء سے 2019ء تک کے کھاتوں کے آڈٹ کیلئے شوکاز نوٹس بھجوائے ہیں جبکہ ایف بی آر کے 2017ء کے آڈٹ کیخلاف درخواست پہلے ہی لاہور ہائیکورٹ میں زیر سماعت ہے، ایف بی آر کی جانب سے تین مسلسل برسوں کے آڈٹ کا انتخاب آڈٹ پالیسی کے منافی ہے،ایف بی آر کے 3 برسوں کے آڈٹ کیلئے ریکارڈ طلبی کے نوٹسز کوغیر قانونی قرار دے کر کالعدم کیا جائے۔

درخواستیں نمٹا

مزید :

صفحہ آخر -