طالبان سے جھڑپوں میں 57 افغان سیکیورٹی اہلکار مارے گئے

طالبان سے جھڑپوں میں 57 افغان سیکیورٹی اہلکار مارے گئے

  

کابل (مانیٹرنگ ڈیسک)افغانستان میں 24گھنٹوں کے دوران طالبان اور افغان فورسز کے درمیان جھڑپوں میں 57 افغان سیکیورٹی اہلکار اور متعدد طالبان جنگجو مارے گئے۔افغان حکام کے مطابق طالبان اور افغان فورسز کی جھڑپیں صوبے بلخ، قندھار، تخار اور کپیسا صوبوں میں ہوئی ہیں۔حکام کے مطابق طالبان نے ان علاقوں میں سیکیورٹی چیک پوسٹوں پر حملے کیے اور افغان سیکیورٹی اہلکاروں کی حملہ آوروں سے جھڑپیں کئی گھنٹوں تک جاری رہیں۔افغان حکام کا کہنا ہے کہ ہلاک ہونے والوں میں افغان فوجی اورافغان پولیس اہلکار شامل ہیں جبکہ  جوابی کارروائی میں طالبان کا بھی جانی نقصان ہوا ہے اور تقریباً 80 جنگجو مارے گئے ہیں، تاہم طالبان نے اپنے ساتھیوں کی ہلاکتوں کی تصدیق نہیں کی ہے۔افغان صوبے قندوز میں طالبان کے ٹھکانے پر افغان فورسز نے فضائی حملوں کے دوران 40 جنگجوؤں کی ہلاکتوں کا دعویٰ کیا ہے تاہم طالبان کا کہنا ہے کہ ان حملوں میں عام شہری جاں بحق ہوئے جن میں بچے اور خواتین بھی شامل تھے۔امریکی نمائندہ خصوصی برائے افغان امن عمل زلمے خلیل زاد نے افغانستان میں پْرتشدد کارروائیوں میں اضافے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے بین الافغان مذاکرات کے فریقین پر تشدد میں کمی کرنے پر زور دیا ہے۔

طالبان

مزید :

صفحہ آخر -