فلپ مورس اور این او ڈبلیو  پی ڈی پی کا آگاہی سیشن 

فلپ مورس اور این او ڈبلیو  پی ڈی پی کا آگاہی سیشن 

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)عالمی یوم صفائی کے موقع پر معذور افراد کے ساتھ کام کرنے والی غیر منافع بخش تنظیموں پر مشتمل نیٹ ورک (NOWPDP)کے تحت آگاہی سیشن اکا نعقاد کیا گیا جس کے بعد ساحل سمندر کی صفائی کا عمل بھی سر انجام دیا گیا۔کوڑے کرکٹ کو نامناسب طریقے سے ٹھکانے لگانے اور گندگی سے ماحولیات پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں،تاہم آگاہی،رویوں کی تبدیلی اور متعلقہ انفرا اسٹریکچر کے ذریعے ا ن خطرات کو کم کیا جاسکتا ہے۔ ساحل سمندر کی صفائی کے ذریعے عالمی یوم صفائی اور کچرے کے خلاف NOWPDP’sکے عزم سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے NOWPDPکے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر عمیر احمد نے کہا کہ ”سب جانتے ہیں کہ کچرے کے ماحولیات پر اثرات مرتب ہوتے ہیں۔اس سے صحت اور معاشرے پر بھی برا اثر پڑتا ہے۔مثبت تبدیلی صرف اس وقت ہی حاصل کی جاسکتی ہے کہ جب ہم انفرادی،ادارتی اور اجتماعی طور پر ایک مستحکم اور پائیدار مستقبل کیلئے اپنی ذمہ داریاں قبول کریں۔ہم اپنی اس کوشش میں فلپ مورس (پاکستان) لمیٹڈ سمیت دیگر شراکت داروں کے تعاون پر انتہائی شکر گذار ہیں۔“NOWPDPنے حال ہی میں اپنا UPCYCLEاقدام متعارف کرایا ہے،جومعذور افراد کی تربیت اور ملازمت کے عمل کے ذریعے کچرے کے خلاف آگاہی پیدا کرنے،صفائی کی سرگرمیوں کے انعقاد اور پالسٹک کی ری سائیکلنگ کے ذریعے دوبارہ قابل استعمال اشیاء کی تیاری پر زور دیتا ہے۔اس موقع پر پراجیکٹ ٹرینرز نے بھی اس مہم میں حصہ لیا۔صفائی کی مہم کے موقع پر فلپ مورس (پاکستان) لمیٹڈ کی ڈائریکٹر کمیو نیکیشن سعدیہ دادا کا کہنا تھا کہ کچرے میں کمی کیلئے بہترین طریقہ آگاہی مہم اوررویوں میں تبدیلی ہے جس کیلئے ہم آج یہاں موجود ہیں۔ہم سمجھتے ہیں کہ کچرے کے پھیلاؤ کو روکنے کے حوالے سے اقدامات کیلئے کارپوریٹ سیکٹر کا کردار انتہائی اہم ہے اور ہم اس مقصد کو آگے بڑھانے کیلئے اپنی کاوشوں کی شمولیت کے حوالے سے پرعزم ہیں۔اس برس ہماری پیرنٹ کمپنی فلپ مورس انٹرنیشنل نے اپنی Integrated Report 2019میں سال2021کے مقابلے میں سال2025تک پلاسٹک کے فضلے میں 50فیصد تک کمی کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -