حکومت ٹیکس نظام کی بہتری کیلئے اقدامات کرے‘ سید ذیشان اختر

 حکومت ٹیکس نظام کی بہتری کیلئے اقدامات کرے‘ سید ذیشان اختر

  

بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر)نائب امیر جماعت اسلامی جنوبی پنجاب سید ذیشان اختر نے کہا ہے کہ اربوں روپے کی جائیدادوں کے مالک وزراء نے 2018میں صفر ٹیکس (بقیہ نمبر45صفحہ 6پر)

ادا کیا ہے۔ وزیر اعلیٰ پنجاب سمیت وفاقی وزراء اور حکومتی عہدیداران ء فیصل واڈا، زرتاج گل، نور الحق قادری، فیصل جاوید، فیاض الحسن چوہان جو دن رات قوم کے سامنے تبدیلی اور حب الوطنی کی مالا جھبتے نہیں تھکتے مگر خود ٹیکس چور نکلے ہیں۔ جب حکمران خود ٹیکس چور ہوں گے تو تحریک انصاف کی تبدیلی پر کون اعتبار کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ ملکی تاریخ کے بدترین حکمران قوم پر مسلط ہوچکے ہیں، جن کو عوامی مشکلات کا احساس نہیں۔ مسلسل مہنگائی، بے روزگاری اور لاقانونیت نے ملک و قوم کو مسائل کی دلدل میں مزید دھکیل دیا ہے۔ عوام کو کسی بھی شعبہ میں ریلیف میسر نہیں۔ بی آر ٹی حکومت کا ناکام ترین منصوبہ ہے جو صرف ایک ماہ میں ہی بند کردیا گیا۔ اس منصوبے میں اربوں روپے کے قومی خزانہ کو نقصان پہنچا ہے۔ چیئرمین نیب اس کا فوری نوٹس لیں۔ انہوں نے کہا کہ 22کروڑ آبادی میں صرف 17لاکھ افراد ٹیکس ادا کرتے ہیں۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ حکومت ٹیکس کے فرسودہ نظام کو ٹھیک کرے مزید افراد کو اس میں شامل کیا جائے۔ ملک میں 500خاندان ایسے ہیں جو پورے ملک کے وسائل پر قابض ہیں۔ تحریک انصاف نے جس نظام کے خاتمے کے لیے مینڈ یٹ حاصل کیا اسی نظام کی تقویت کا باعث بن رہے ہیں۔ انہوں نے اس حوالے سے مزید کہا کہ حکومت نے گرے لسٹ کی آڑ میں پاکستانی قوم کو غلامی کے شکنجے میں جکڑ دیا ہے۔ فیٹف بل غیر قانونی اور غیر آئینی ہے۔ جس کا مقصد صرف اور صرف غیر ملکی آقاؤں کو خوش کرنا ہے۔ 

ذیشان اختر

مزید :

ملتان صفحہ آخر -