غیر جانبدارانہ الیکشن سے ہی عوام کا اعتماد بحال ہوگا‘ لیاقت بلوچ 

غیر جانبدارانہ الیکشن سے ہی عوام کا اعتماد بحال ہوگا‘ لیاقت بلوچ 

  

ملتان (پ ر) نائب امیر جماعت اسلامی اور سیاسی قومی امور کمیٹی کے صدر لیاقت بلوچ نے جوہر ٹاؤن میں ورکرز کنونشن اور معززین کے اعزاز میں منعقدہ تقریب سے(بقیہ نمبر25صفحہ 6پر)

 خطاب کرتے ہوئے کہاکہ اپوزیشن جماعتوں کی اے پی سی ہوگئی۔ میاں نوازشریف اور آصف زرداری کے خطاب نے اسے اور اہم بنا دیا۔ اپوزیشن جماعتوں نے اتحاد اور لائحہ عمل بھی دے دیا ہے اب عملدرآمد کا مرحلہ باقی ہے۔ اے پی سی کی شرکاء جماعتوں نے فی الحال ایک دوسرے کو کاٹنے کی روش برقرار رکھی۔ مولانا فضل الرحمن کی آواز بند کرنا اور میاں نوازشریف کی جانب سے کشتیاں جلا کر سب کچھ داؤ پر لگادینا نہایت اہم لیکن یہ حقیقت ہے کہ ایسے انقلابی لائحہ عمل کے لیے انہوں نے اپنی جماعت کو تیارہی نہیں کیا۔ اے پی سی کا لائحہ عمل طویل المعیاد منصوبہ بندی ہے اگر بڑے بنیادی اقدامات نہ ہوئے تو آئندہ انتخابات سے پہلے کے مزید دو سال بھی گزر ہی جائیں گے۔  لیاقت بلوچ نے کہاکہ قیام پاکستان کے بعد سے من حیث القوم اسلام سے روگردانی کی گئی۔ قرآن و سنت کی بنیاد پر نظام اور ملت پاکستان کو متحد کرنے کی بجائے ٹکڑوں، عصبیات اور فرقہ واریت کی آگ میں دھکیل دیا گیا ہے۔ اداروں کے استحکام کی بجائے ایڈہاک ازم کے لیے شخصیات کے بت تراشے جاتے ہیں اسی وجہ سے جمہوری، سیاسی، پارلیمانی عمل میں استحکام نہیں آیا بلکہ ہر آنے والے دن اسٹیٹس کو اور عالمی مالیاتی اداروں کی غلامی کا شکنجہ کسا جارہاہے۔ نظام احتساب کاکچومر نکا لدیا ہے کرپٹ مافیابالادست ہو گیا ہے۔ سماجی، معاشی ناانصافی قومی روگ بنادیا گیاہے۔ قرضوں، سود، کرپشن کی لعنت کی وجہ سے غربت، مہنگائی افراط زر پیدا واری لاگت میں بے تحاشا اضافہ ہوگیا ہے‘عوام بدحال ہو گئے ہیں۔ مسئلہ کشمیر پر حکومت کی مجرمانہ اور انجینئرڈ ناکامی قومی المیہ ہے۔  لیاقت بلوچ نے کہاکہ جماعت اسلامی ملک گیر تحریک کے ذریعے پوری قوم کومفادات میں پھنسے ریاستی ترجیحات سے آزاد کرائیں گے۔ عوام کی گردنوں پر مسلط ظلم جبر غلامی اور ذلت کے شکنجے توڑ دیں گے۔ آزادانہ، منصفانہ اور غیر جانبدارانہ انتخابات کے ذریعے ہی عوام کا اعتماد بحال کریں گے۔ پاکستان کو اسلامی اور خوشحال بنائیں گے۔

لیاقت بلوچ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -