ذیا بیطس کا شکار افراد وزن کم کر کے اپنے لبلبے کو دوبارہ صحت مند بناسکتے ہیں، سائنسدانوں نے طریقہ بتادیا

ذیا بیطس کا شکار افراد وزن کم کر کے اپنے لبلبے کو دوبارہ صحت مند بناسکتے ہیں، ...
ذیا بیطس کا شکار افراد وزن کم کر کے اپنے لبلبے کو دوبارہ صحت مند بناسکتے ہیں، سائنسدانوں نے طریقہ بتادیا
کیپشن:    سورس:   creative commons license

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) ذیابیطس کے مرض کے متعلق خیال کیا جاتا ہے کہ یہ ایک بار لاحق ہو جائے تو تمام عمر اس کے انجکشن لگاتے ہی گزرتی ہے لیکن اب برطانیہ کی نیوکاسل یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے موٹاپے کے شکار افراد کو اس موذی مرض کو ہمیشہ کے لیے ختم کرنے کا طریقہ بتا دیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق سائنسدانوں نے بتایا ہے کہ اگر موٹاپے کے شکار افراد اپنے وزن میں کمی کر لیں تو اس سے ان کے لبلبے کو پہنچنے والے نقصان کا ازالہ ممکن ہے اور ان کو لاحق شوگر یکسر ختم ہو سکتی ہے۔ 

سائنسدانوں کا کہنا تھا کہ وزن کم کرنے سے شوگر کے مریضوں کے لبلبے کی شکل اور سائز واپس اپنی اصل حالت میں آ جاتے ہیں اور ان کا لبلبہ پہلے کی طرح ٹھیک کام کرنے لگتا ہے۔ دوسری قسم کی ذیابیطس کے مریضوں کے لبلبہ کا سائز ایک تہائی تک چھوٹا ہو جاتا ہے اور اس کی شکل بھی تبدیل ہو جاتی ہے۔ تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ رائے ٹیلر کا کہنا تھا کہ وزن میں 12کلوگرام تک کمی کر لینے سے ہی لبلبے کی شکل اور سائز اصل حالت میں آ جاتے ہیں جس سے وہ انسولین کی مناسب مقدار پیدا کرنی شروع کر دیتا ہے اور مریض کو ذیابیطس سے نجات مل جاتی ہے۔

مزید :

تعلیم و صحت -