منشیات کے رجحان میں اضافہ،خواتین پارلیمنٹیرینز کا اظہار تشویش

منشیات کے رجحان میں اضافہ،خواتین پارلیمنٹیرینز کا اظہار تشویش

  

لاہور(جنرل رپورٹر)لاہور شہر میں منشیات کا بڑھتا ہوا رجحان چھ رکنی خواتین اراکین پنجاب اسمبلی کے وفد کا ڈرگ ایڈوائزری ٹریننگ حب کا دورہ۔ شہر میں منشیات کے بڑھتے ہوئے رجحان اور علاج معالجے کی سہولیات پر جائزہ بریفنگ۔ کنسلٹنٹ انسداد منشیات مہم سید ذوالفقار حسین نے ابتک کئے جانے والے اقدامات پر بریفنگ دی خواتین اراکین پنجاب اسمبلی ایم پی اے زینب عمیر، ایم پی اے عائشہ اقبال، ایم پی اے طلعت فاطمہ نقوی، ایم پی اے شیوانا بشیر اور دیگر اراکین نے شرکت کی۔ سید ذوالفقار نے بتایاکہ سڑکوں باغوں اور فٹ پاتھوں میں 10 ہزار اور گھروں میں تقریباً 4 لاکھ افراد نشے کا استعمال کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ لاہور میں نشے کے عادی افراد کے لیے علاج گاہوں کی اشد ضرورت ہے۔اس موقع پرخواتین پارلیمانی وفدنے لاہور میں منشیات کی بڑھتی ہوئی موجودہ  صورتحال پر تشویش کا اظہارکیا۔

سید ذوالفقار حسین نے کہا کہ منشیات کا مسئلہ انتہائی اہم ہے۔اسکو حل کرنے کی اشد ضرورت ہے۔ اس موقع پرخواتین پارلیمانی وفد نے نشے کا استعمال بڑھنا ہم سب کے لیے لمحہ فکریہ ہے۔ خواتین پنجاب اسمبلی کی اراکین نینوجوانوں کو نشہ کی لت سے بچانے کے لیے ڈرگ ایڈوائزری ٹریننگ حب کی خدمات قابل ستائش ہیں۔بریفینگ لاہور اقراء  لائنز کلب کے اشترک سے منعقد ہوئی۔ صدر لاہور اقراء  لائنز کلب حجاب مظہر سنئیر رجسٹرار ڈاکٹر شعیب، پرنسپل حسن اشرف، وائس چیئرمین عدیل راشد، کوآرڈینیٹر سید محسن سمیت دیگر نے شرکت کی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -