ایم ایس ایف کے عہدیداروں پر قاتلانہ حملہ کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

  ایم ایس ایف کے عہدیداروں پر قاتلانہ حملہ کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

  

پشاور(سٹی رپورٹر)ایم ایس ایف ضلع پشاور کے عہدیداران نے ضلع پشاور کے صدر صمد خان اور مولاداد پر قاتلانہ حملہ کے خلاف پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ حملہ اوروں 28 گھنٹوں کے اندر گرفتار کر کے انصاف فراہم کیا جائے بصورت دیگر احتجاجی کا دائرہ کاع وسیع کرینگے مظاہرے کی قیادت پشاور ڈویژن کے صدر خان زمان آفریدی،سنیئر نائب صدر اویس اتمان خیل اور سیکرٹری اطلاعات سراج خان سمیت دیگر عہدیداران نے کی مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بینرز اٹھا رکھے تھے جس پر انکے حق میں مطالبات درج تھے اس موقع پر شرکاء کا کہنا تھا کہ ایم ایس ایف ضلع پشاور کے دو عہدیداران پر گزشتہ روز قاتلانہ حملہ کیا گیا ہے جسکے باعث وہ شدید زخمی ہے اور ایل ار ایچ میں زیر علاج ہے تاہم ایس ایچ او فقیر آباد  ملزمان کی گرفتاری میں مبینہ طور پر ٹال مٹول سے کام لے رہے  ہے انہوں نے کہا کہ ایم ایس ایف کے کارکنان میں اس حوالے سے شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے انہوں نے کہا کہ حملہ اوار افغان مہاجرین ہے جنہیں با اثر افراد کی پشت پناہی حاصل ہے اور اسے بچانے کی کوشش کی جا رہی ہے اور افغان مہاجرین کے خلاف قانون فعل سے صوبے کے حالات کشیدہ کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے مظاہرین نے حملہ اوراں کی گرفتاری کیلئے  48 گھنٹوں کی ڈیڈ لائن دیتے ہوئے واضح کیا ہے کہ گرفتاری نہ ہونے کی صورت میں صوبہ گیر احتجاج شروع کرینگے جسکی تمام تر ذمہ داری متعلقہ پولیس حکام پر عائد ہوگی۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -