کاشتکاروں کیلئے سبسڈی، ایپ ایک ماہ سے بند،متاثرین کا احتجاج

کاشتکاروں کیلئے سبسڈی، ایپ ایک ماہ سے بند،متاثرین کا احتجاج

  

کوٹ ادو (تحصیل رپورٹر)  حکومت پنجاب کی جانب سے ضلع مظفرگڑھ کے کسانوں کے ساتھ ایک اور ظلم سامنے أگیا ہے،وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے ویژن اور وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان خان بزدار کی ہدایت پر کاشتکاروں کوڈائریکٹ کیش سبسڈی پہنچانے کے لئے محکمہ زراعت پنجاب کی جانب سے جاری کئے جانے والے ضلع بھر کے کاشت(بقیہ نمبر5صفحہ6پر)

 کاروں کے سبسڈی واؤچرز کی تصدیق کرنے والی سبسڈی ایپ کو  ایک ماہ سے بلاک کردیا ہے،مذکورہ کسان کارڈ جس سے سبسذی حاصل کرنے کی أخری تاریخ 30 ستمبر ہے،اس کسان کارڈ پرنہ صرف  کاشتکار کھاد اور بیج رعایتی قیمت پر حاصل کرنا تھا جبکہ  کسان کارڈکو اے ٹی ایم پر استعمال کر کے کسان فوری کیش بھی حاصل کرسکتا تھا،سافٹ ویر  بلاک ہونے کی وجہ سے ضلع مظفرگڑھ کے لاکھوں کسان اس سبسڈی سے محروم ہو جائیں گے،سافٹ وئیر کی بندش پر کاشتکاراپنے  کسا ن کارڈ کی  رجسٹریشن کی خاطر محکمہ زراعت کے دفتروں میں ایک ماہ سے چکر کاٹ رہے ہیں مگر ان کی تصدیق نہیں ہو رہی،دوسری طرف ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ کسان سبسڈی ایپ  سے محکمہ زراعت کے اہلکاروں نے گھپلے کرکے لاکھوں کا غبن کیا ہے جس کی وجہ سے سافٹ وئیر بلاک کیا گیا ہے،محکمہ زراعت کے مطابق انہوں نے سافٹ وئیر کھولنے کے حوالے سے کئی بار محکمہ زراعت کو لیٹر لکھے مگر سافٹ وئیر بحال نہ کیا گیا،کاشتکاروں نے احتجاج کرتے ہوئے وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان خان بزدار،چیف سیکرٹری زراعت پنجاب، صوبائی وزیر زراعت اور دیگر اعلی حکام سے مطالبہ کیا ہے سافٹ ویئر کو فوری طور پر بحال کیا جائے تاکہ ضلع مظفرگڑھ کے لاکھوں کسان حکومت کی  اس سبسڈی سے مستفید ہو سکیں 

ایپ بند

مزید :

ملتان صفحہ آخر -