چوری شبہ،5افراد کانوجوان پروحشیانہ تشدد، بیوی، بیٹی اغواء

چوری شبہ،5افراد کانوجوان پروحشیانہ تشدد، بیوی، بیٹی اغواء

  

ملتان،لودھراں (وقائع نگار،نمائندہ پاکستان)چوری کا شبہ پر5 افراد نے 21 سالہ رشتہ دار پر وحشیانہ   تشددکیا، بیوی اور بیٹی کو قیدکر لیا تفصیل کے مطابق تھانہ بستی ملوک کے علاقے قصبہ مڑل کے رہائشی 21 سالہ محمد قاسم عرف علی ولد محمد ستار نے پریس کلب لودھراں میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے الزام لگایا کہ منگل کی رات اس کے(بقیہ نمبر35صفحہ6پر)

 رشتے داروں محمد رفیق پہلوان،شفیق،ناصر، امتیاز، دلشاد اور وقاص بلوچ نے اسے اس کی بیوی اور ایک سالہ بیٹی سمیت اسے گھر سے اغوا کرلیا اور اپنے گھر لے گئے جہاں اس کی بیوی اور بیٹی کو گھر میں قید کر لیا جبکہ  اسے کار میں ڈال کر نامعلوم مقام پر لے گئے جہاں مجھے چارپائی پر الٹا لٹا کر باندھ دیا اورتمام ملزمان نے  چمڑے کے بیلٹ اور سوٹوں سے بری طرح تشدد کا نشانہ بنایا ان کے بہیمانہ تشدد سے میرے سارے کپڑے خون آلود ہو گئے اس کے بعد وہ مجھے گھر کے باہر پھینک کر چلے گئے جب کہ میری بیٹی اور بیوی تاحال ملزمان کے قبضہ میں ہے قاسم نے کہا کہ جب میں نے پولیس ریسکیو 15 پر کال کی تو اس کے بعد مجھے پرائیویٹ نمبر سے کال آئی کے تم خود لاڑ چوکی پہنچ جا محمد قاسم نے آر پی او ملتان سے ملزمان کے خلاف سخت سے سخت کاروائی اور بیوی اور بیٹی کی بازیابی کا مطالبہ کیا ہے ایس ایچ او تھانہ بستی ملوک طاہر عزیز کے مطابق ملزمان کے مطابق قانونی کاروائی کی جارہی ہے۔جبکہ ملتان میں تھانہ بستی ملوک کے علاقے قصبہ مڑل میں نوجوان پر بہیمانہ تشدد کرنے والے مرکزی ملزم سمیت 02 ملزمان گرفتار کرلئے گئے۔07 نامزد اور 2/3 نامعلوم ملزمان کے خلاف تھانہ بستی ملوک میں مقدمہ درج کرلیا گیا۔ گرفتار ملزمان میں اورنگزیب ولد محمد رفیق اور ناصر ولد غلام محمد شامل ہیں۔بقایا ملزمان کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

چوری شبہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -