کیس ری لسٹ کرنے پرپولیس افسران سمیت 27افراد کونوٹس

 کیس ری لسٹ کرنے پرپولیس افسران سمیت 27افراد کونوٹس

  

  ملتان (خصو صی رپورٹر  )  لاہور ہائیکورٹ ملتان بنچ کے جج مسٹر (بقیہ نمبر39صفحہ6پر)

جسٹس علی ضیا باجوہ نے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر راجن پور ایس پی کمپلینٹ سیل، ایس ایچ او تھانہ صدر جام پور، ڈی ایس پی پرویز اختر، اے ایس ایس  شکیل دریشک، ایس ایچ او تھانہ سٹی جامپور غفار، فیض رسول کانسٹیبل محمد بخش آرائیں کے خلاف کیس کو ری لسٹ کرنے اور پولیس افسران سمیت 27 افراد کو نوٹس جاری کرتے ہوئے آئندہ پیشی پرریکارڈ اور رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔ قبل ازیں عدالت عالیہ میں پیٹشنر محمد ابراہیم نے ایڈیشنل سیشن جج جامپور کے فیصلے کے خلاف کونسل بیرسٹر ریحان خالد جوئیہ کے ذریعے درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا تھاکہ سیشن کورٹ جام پور کا 2 اگست 2021 کا فیصلہ غیر قانونی، حقائق کے برعکس اور قانون کے صریحا خلاف ہے اس لیے اس حکم کو منسوخ کیا جائے ہائی کورٹ نے 8 جون 2021 کو ایس ایچ او تھانہ سٹی جامپور کو حکم دیا تھا کہ وہ بوگس چیک کے مقدمہ میں دونوں فریقین کی سماعت روزانہ کریں لیکن ان احکامات پر عمل درآمد کرنے کی بجائے وہ پٹیشنر کے گھر میں دیگر پولیس اہلکار ان کے ہمراہ گھس گیا اہل خانہ کو زدوکوب کیا پٹیشنر اور اس کے بیٹے کو مارا ان کے خلاف ایف آئی آر نمبر 247/21 زیر دفعات 353 186 324 342 148 149 تھانہ صدر جامپور میں درج کیں اور انہیں لاک اپ میں بند کر دیا بعد ازاں ضمانت پر رہا ہوئے پولیس اہلکاروں نے غیر قانونی کاروائی پر خود کو کو سزا سے بچانے کے لیے ایف آئی آر درج کی کیونکہ پیٹشنر نے انکے خلاف سول سوٹ بھی دائر کیا ہوا تھا پولیس پارٹی گھر سے 20 تولہ سونے کے زیورات 20 لاکھ روپے نقدی، 600 عدد تمباکو کی بوریاں اور دیگر قیمتی سامان بھی ساتھ لے گئی تھی بتایا گیا ہے کہ بوگس چیک دینے کے مقدمہ میں ملوث ملزم کے ساتھ پولیس ملی بھگت کر ک ظلم و جبر ڈھا رہی ہے۔

نوٹس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -