رحیم یار خان، لڑکی سے اجتماعی بداخلاقی کے ملزمان تاحال گرفتار نہ ہوسکے 

رحیم یار خان، لڑکی سے اجتماعی بداخلاقی کے ملزمان تاحال گرفتار نہ ہوسکے 

  

لاہور (کرائم رپورٹر) تھانہ رکن پور رحیم یار خان میں نو عمر لڑکی سے اجتماعی بد اخلاقی کے ملزمان کے خلاف مقدمہ درج ہوئے 40روزگزر گئے مگر پولیس تاحال ملزمان کو گرفتار نہ کر سکی متاثرہ خاندان حصول انصاف کے لئے روزنامہ پاکستان کے دفتر پہنچ گیا اور اس نے الزام لگایا ہے کہ پولیس نے اس کا مقدمہ درست دفعات کے تحت درج نہیں کیا ڈی پی او رحیم یار خان اسد سرفرازنے بتایا ہے کہ ملزمان نے عبوری ضمانت کروا رکھی ہے جبکہ اصل حقائق تک پہنچنے کے لیے ڈی این اے بھی کروایا گیا  مقدمہ کے مدعی عبدالغفور نے تھانے میں درج  ایف آئی آر  نمبری 344/21میں موقف اختیار کیا ہے کہ میں موضع رنگپور کا رہائشی ہوں محنت مزدوری کرتا ہوں 8 اگست تقریباً شام سات بجے  میری بیٹی (ص) جس کی عمر  18 سال ہے گھر کے قریب فصل کپاس میں چارہ گھاس وغیرہ کاٹنے گئی تو اسی دوران ملزمان غلام مرتضیٰ اور محمد ندیم آ گئے میری بیٹی (ص)سے زبردستی بدا خلاقی کرنے کی کوشش کرنے لگے شورپر مقامی لوگ بھی وہاں پہنچ گئے اور  ملزمان فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ملزمان نے زبردستی میری بیٹی کے ساتھ بداخلاقی کرنے کی کوشش کی ہے ملزمان کیخلاف کارروائی کی جائے،متاثرہ شخص نے بتایا ہے کہ یہ درخواست پولیس کی ہدایت پر لکھی گئی ملزمان بداخلاقی کے مرتکب ہوئے ہیں پولیس نے انہیں ایف آئی آر میں بچانے کی کوشش کی ہے اور اب انہیں گرفتار بھی نہیں کر رہے وزیراعلیٰ پنجاب اور آئی جی پولیس سے میری اپیل ہے کہ ملزمان کو گرفتار کیا جائے اس حوالے سے مقامی ڈی پی او اسد سرفراز نے روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا ہے کہ پولیس نے درخواست ملتے ہی مقدمہ درج کر لیا تھا ایسے مقدمات کا فیصلہ ڈی این اے رپورٹ آنے کے بعد کیا جاتا ہے ڈی این اے کروایا گیا ہے جبکہ ملزم عبوری ضمانت پر ہیں جیسے ہی رپورٹ موصول ہوئی مزید کارروائی بھی عمل میں لائی جائے گی۔

اجتماعی بداخلاقی 

مزید :

صفحہ اول -