آرمی چیف کی تعیناتی کیلئے پی ٹی آئی عدالت  گئی تو فیصلہ آئین کے مطابق ہو گا، فضل الرحمن

  آرمی چیف کی تعیناتی کیلئے پی ٹی آئی عدالت  گئی تو فیصلہ آئین کے مطابق ہو ...

  

سکھر(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوزایجنسیاں) پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ اور امیر جمعیت علمائے اسلام (ف) مولانا فضل الرحمن نے تحریک انصاف کے چیئر مین اور سابق وزیراعظم عمران خان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہو ئے کہا ہے کہ بین الاقوامی مجرم کی جانب سے اداروں کی بات کرنے پر تعجب ہے، قانونی کارروائی سے بچنے کیلئے اداروں پر تنقید کر رہا ہے۔ آرمی چیف کی تعیناتی کے حوالے سے اگر پی ٹی آئی عدالت گئی تو عدالت آئین کے مطابق فیصلہ کرے گی۔سکھر میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے امیر جمعیت علمائے اسلام (ف) کا کہنا تھا کہ سیلاب کی تبادہ کاریاں بلا حدود ہیں، تمام سماجی تنظیموں کو خدمات پیش کرنے پر خراج تحسین ہیش کرتا ہوں، متاثرہ افراد کی دادرسی اسلامی فریضہ بن جاتا ہے،سیلاب سے شاہراؤں کا مکمل انفراسٹرکچر تباہ ہو گیا ہے، جہاں راستے منقطع ہوئے ہیں انہیں بحال کیا جا رہا ہے، سڑکوں کی مکمل تعمیر میں وقت درکار ہو گا، ایک دم نہیں ہو سکیں گے۔عمران خان بین الاقوامی مجرم اور امپورٹڈ چور ہے، کارروائی سے بچنا چاہتا ہے، لوگ جانتے ہیں عمران خان سیاستدان نہیں،عمران خان کے خلاف کارروائی مجرم کے خلاف کارروائی ہوگی، آرمی چیف کی تعیناتی کے حوالے سے اگر پی ٹی آئی عدالت گئی تو عدالت آئین کے مطابق فیصلہ کرے گی۔پی ڈی ایم سربراہ کا کہنا تھا کہ ٹرانس جینڈر بل جے یوآئی کی نہیں پی ٹی آئی کی ضرورت ہے۔

فضل الرحمن 

مزید :

صفحہ اول -