امام حسینؓ اتحاد و اتفاق کے علمبردار تھے‘ اباسین یوسفزئی

امام حسینؓ اتحاد و اتفاق کے علمبردار تھے‘ اباسین یوسفزئی

  

پشاور (سٹی رپورٹر) امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان پشاور ڈویژن کے زیر اہتمام جامعہ پشاور میں یوم حسین علیہ السلام بعنوان ''حسین سرچشمہ ھدایت'' کا انعقاد کیا گیا۔ جس میں آئی ایس او پاکستان کے ڈویژنل صدر برادر شوکت شیرازی، علامہ محمد حسین مبلغی، علامہ اخلاق حسین شریعتی، علامہ عابد حسین شاکری، پروفیسر ڈاکٹر اباسین یوسفزئی، پروفیسر ڈاکٹر محمد سلیم و دیگر مقررین نے یوم حسین میں شرکت کی۔ اس موقع پرمقررین کا کہنا تھا کہ حسین ؑ نے معرکہ عظیم میں امت رسول کو جذبہ وحدت کا درس دیا کہ رسول اکرم ﷺکی امت کو وحدت کی ضرورت ہے۔اور یہی وجہ ہے کہ حسین ؑ آج اتحاد و اتفاق کے علمبردار و پیامبر کی حیثیت سے جانے جاتے ہیں۔ آج سب حسین ؑ کے نام سے متحد نظر آتے ہیں۔حضرت امام حسین علیہ السلام کا مکتب اور سیرت ایک واحد زریعہ ہے جس سے مسلمانوں کے اندر اتحاد کی فضاء قائم ہو سکتی ہے۔مقررین نے مزید کہا کہ  یہ بات شک و شبہ سے بالاتر ہے، کہ دنیا کا ہر کلمہ گو حسینی  ہے اس لئے اس کی ذمہ داری ہے کہ یزیدیت کے خلاف ایک دوسرے کے شانہ بشانہ کھڑے ہو کر کام کرے اور سیرت امام حسین ع کو اپنے کردار پر نافذ کرتے ہوئے پیغام حسینیت کو دنیا کے کونے کونے میں پہنچائے۔یزید مٹ گیا مگر حسینؑ مرکز وحدت بن کر آج بھی زندہ ہے اور تاقیامت زندہ رہے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -