پاکستانی سکول میں ’سنی لیون ‘کی ’آمد‘، ’معصوم ‘شرکاءجھومتے رہے

پاکستانی سکول میں ’سنی لیون ‘کی ’آمد‘، ’معصوم ‘شرکاءجھومتے رہے
پاکستانی سکول میں ’سنی لیون ‘کی ’آمد‘، ’معصوم ‘شرکاءجھومتے رہے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نمل نامہ(محمد زبیراعوان)سکھوں یا عرف عام سرداروں کی فلموں کے شائقین کینیڈا کے نام سے کافی حد تک شناسا ہیں لیکن سونے پر سہاگہ یہ ہوا کہ پاک و ہند میں دو شخصیات نے کینیڈا کی شہرت میں اضافے کا باعث بنیں اور ان میںسے ایک ’صرف بالغوں کے لئے ‘کی فلموں سے شہرت پانیوالی بالی ووڈ اداکارہ سنی لیون ہیں۔ ان کی شہرت کا اندازہ اس بات سے بھی لگایا جاسکتا ہے کہ پاکستان میں موجود ایک تعلیمی ادارے کے نام پر چلنے والے سکول کی انتظامیہ نے اپنی ویلکم پارٹی میں بھی نہ صرف سنی لیون کے گانے کو خصوصی اعزاز سمجھا بلکہ معصوم بچیوں کو بھی اس پر ناچ کا پریکٹیکل ہی کروادیا۔

یہ روشن خیالی کراچی، لاہور یا اسلام آباد جیسے شہر کے کسی پوش علاقے میں نہیں بلکہ میانوالی کے پسماندہ علاقے میں دیکھی گئی۔ اس سے قبل دیہاتوں میں رواں دواں ٹریکٹر یا ٹرکوں پر عطاءاللہ خان عیسیٰ خیلوی کے گانے ہی کانوں میں رس گھولتے رہے۔

وادی نمل میں عمران خان کی ’نمل یونیورسٹی‘ اور اس کی سیاسی حریف جماعت کی ”بعض معاویہ“ میں کی گئی کوششوں کے نتیجے میں قائم ہونیوالے کالج کی وجہ سے کچھ تبدیلی تو شائد ناگزیر تھی، آپ اسے ترقی کا نام بھی دے سکتے ہیں لیکن برطانیہ کے معروف تعلیمی ادارے ”آکسفورڈ“ کا نام استعمال کرنیوالے سکول نے ایک ہی نشست میں ترقی کی کچھ زیادہ ہی منازل طے کرلیں۔

سنی لیون کے گانے پر ناچنے والی معصوم بچیوں کو ہفتوں ٹریننگ کرائی گئی اور شاید وہ گانے میں استعمال ہونیوالے الفاظ کے مطلب سے بھی واقف نہیں تھیں۔قابل ذکر بات یہ ہے کہ تلاوت قرآن مجید کے بعد سنی لیون کے گانے پر ناچ کو ویلکم گانا بنایا گیا اور پھردہشتگردوں کا نشانہ بننے والے پشاور آرمی پبلک سکول کے بچوں کا نمبر آیا اور پاک فوج کی طرف سے جاری کئے جانے والے گانے ”بڑادشمن بنا پھرتاہے جو بچوں سے لڑتاہے“پر ڈرامہ پیش کرکے شہداءکو خراج تحسین پیش کیاگیا۔

اس سارے معاملے پر سکول انتظامیہ نے موقف دینے سے گریز کیا اور نہ ہی ’آکسفورڈ‘ کا نام استعمال کرنے سے متعلق کوئی جواب دے سکے۔ سوال یہ ہے کہ کیا ہم اس حد تک گرگئے ہیں کہ اپنے شہداءاور مستقبل کے ”ڈاکٹر عبدالقدیر“ یا ”راحیل شریف“ پر شرمناک فلموں کی سابق ہیروئن کو ترجیح دیں اور سب سے بڑھ کر معصوم بچوں کی تقریب میں سنی لیون کے گانے کو ’زینت‘ بنانے کی ضرورت ہی کیوں پیش آئی؟؟؟

اللہ آپ کے بچوں کو صحت، تندرستی اور فرمانبردار بنائے۔ آمین

مزید : بلاگ