ہائی کورٹ نے شریف خاندان کی شوگر مل سے کسانوں کو ادائیگیاں کروانے کا حکم دے دیا

ہائی کورٹ نے شریف خاندان کی شوگر مل سے کسانوں کو ادائیگیاں کروانے کا حکم دے ...
ہائی کورٹ نے شریف خاندان کی شوگر مل سے کسانوں کو ادائیگیاں کروانے کا حکم دے دیا

  

لاہور (نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے کین کمشنر پنجاب کو شریف خاندان کی رمضان شوگر مل سے غریب کسان کو گنے کا معاوضے دلوانے کا حکم دیتے ہوئے قرار دیا ہے کہ کین کمشنر پنجاب دستیاب اختیارات کے تحت عدم ادائیگی پر شوگر مل کی جائیداد اور اکاﺅنٹس بھی قرق کر سکتا ہے، گنے کے کسان معاوضے کے لئے دھکے کھاتے پھر رہے ہیں ۔ مسٹر جسٹس فرخ عرفان خان نے یہ حکم ایک کسان منظور احمد کی گنے کی عدم ادائیگی کے خلاف دائردرخواست پرجاری کیا، درخواست گزار کے وکیل محمد اکبر خان نے موقف اختیار کیا کہ شریف خاندان کی ملکیت رمضان شوگر ملز کو 9 لاکھ 25ہزارروپے کاگنا سپلائی کیا تھاتاہم کئی ماہ گزرنے کے باوجود شوگر مل انتظامیہ معاوضہ ادا نہیں کر رہی ہے، اس بابت کین کمشنر پنجاب کو بھی درخواست دی ہے مگر کین کمشنر پنجاب خاموش تماشائی کا کردار ادا کر رہے ہیں، عدالت نے قرار دیا کہ عدلیہ گنے کے کسانوں کے ساتھ ناانصافی پر خاموش نہیں بیٹھ سکتی،شوگر ملزم مالکان کئی کئی ماہ غریب کسانوں کو معاوضے ادا نہیں کرتے اور کسان اپنے حق کے لئے دھکے کھاتے پھر رہے ہیں مگر کوئی ان کی شنوائی کو تیار نہیں، عدالت نے درخواست نمٹاتے ہوئے کین کمشنر پنجاب کو حکم دیا کہ پنجاب شوگر اینڈ فیکٹریز ایکٹ اور پنجاب لینڈ ریونیو ایکٹ کے تحت حاصل تمام اختیارات استعمال کرتے ہوئے درخواست گزار کسان کورمضان شوگر مل سے اس کا معاوضہ دلوائے، عدالت نے قرار دیا کہ دستیاب قانون کے تحت کین کمشنر کسانوں کو معاوضے کی عدم ادائیگی پر شوگر ملزکے اکاﺅنٹس اور جائیداد بھی ضبط کرنے کا حکم جاری کر سکتا ہے۔

مزید : لاہور