ہائی کورٹ :ممکنہ پولیس مقابلے کے خلاف درخواست سے وزیراعلیٰ ،سابق وزیر قانون کے نام حذف کرانے کی استدعا مسترد

ہائی کورٹ :ممکنہ پولیس مقابلے کے خلاف درخواست سے وزیراعلیٰ ،سابق وزیر قانون ...
ہائی کورٹ :ممکنہ پولیس مقابلے کے خلاف درخواست سے وزیراعلیٰ ،سابق وزیر قانون کے نام حذف کرانے کی استدعا مسترد

  

لاہور (نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے شہری کو ممکنہ پولیس مقابلے میں مارے جانے کے خلاف دائر درخواست پر حبس بیجا میںرکھے گئے شخص کو بازیاب کرنے کا حکم دے دیا،عدالت نے وزیر اعلی شہباز شریف اور سابق وزیر قانون رانا ثنا اللہ کے نام مدعا علیہان کی فہرست سے خارج کرنے کے لئے سرکاری وکیل کی استدعا مسترد کر دی۔ جسٹس عالیہ نیلم نے کیس کی سماعت کی۔درخواست گزار دانیال نوید نے موقف اختیار کیا کہ اس کے قریبی عزیز کو پولیس نے حبس بیجا میں رکھا ہواہے اور خدشہ ہے کہ اسے وزیر اعلی پنجاب اور رانا ثنا اللہ کی ہدایت پرپولیس مقابلے میں مار دیا جائے گا،عدالتی حکم پر ایس پی سی آئی اے نے پیش ہو کر عدالت کو آگاہ کیا کہ نوید عرف زاہد پولیس کو متعدد مقدمات میں مطلوب ہے مگر تاحال وہ پولیس کی حراست میں نہیں۔سرکاری وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ حبس بیجا کی درخواست سے وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف اور رانا ثنا اللہ کا نام بطور فریق خارج کرنے کا حکم دیا جائے تاہم عدالت نے سرکاری وکیل کی فریق نہ بنانے کی استدعا مسترد کرتے ہوئے سی پی او فیصل آباد کو نوید عرف زاہد کو بازیاب کرا کے 27اپریل کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم دے دیاہے۔

مزید : لاہور