2016: آخری سہ ماہی کے دوران برانچ لیس بینکنگ ٹرانزیکشنز میں 23فیصد اضافہ

2016: آخری سہ ماہی کے دوران برانچ لیس بینکنگ ٹرانزیکشنز میں 23فیصد اضافہ

کراچی (اکنامک رپورٹر) سال 2016 ء کی آخری سہ ماہی کے دوران برانچ لیس بینکنگ سے کی جانے والی ٹرانزیکشنز میں 23 فیصد اضافہ ہوا ہے اور اکتوبر تا دسمبر 2016ء کے دوران 597 ارب روپے کی ٹرانزکیشنز کی گئی ہیں جبکہ اس سے گزشتہ سال کے اسی عرصہ کے دوران برانچ لیس بنیکنگ کے شعبہ سے 486 ارب روپے کا لین دین کیا گیا تھا۔ سٹیٹ بینک آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق سال 2016ء کے آخری 3 ماہ کے دوران ٹرانزیکشنز کی تعداد میں بھی سال 2015ء کے اسی عرصہ کے مقابلہ میں 31.5 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ اکتوبر تا دسمبر 2016ء کے دوران برانچ لیس بینکنگ کے شعبہ کی ٹرانزیکشنز 133.74 ملین تک بڑھ گئیں جبکہ سال 2015ء میں اکتوبر تا دسمبر کے دوران 101.6 ملین ٹرانزیکشنز کی گئی تھیں۔ رپورٹ کے مطابق برانچ لیس بینکاری کا شعبہ روز بروز ترقی کی نئی منازل طے کر رہا ہے۔ جس سے ملک کے دوردراز اور دشوار گزار دیہی علاقوں میں عوام کو بینکاری کی سہولیات تک رسائی میں معاونت حاصل ہو رہی ہے۔

مزید : کامرس