جب تک عوام خوشحال نہیں ہوں گے ملک آگے نہیں بڑھ سکتا ، صبا بٹ

جب تک عوام خوشحال نہیں ہوں گے ملک آگے نہیں بڑھ سکتا ، صبا بٹ

لاہور( فورم :انٹرویو دیبا مرزا:تصاویر علی رضا) تحریک انصاف کی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی ممبر اور سعودی عرب کی چیف کوآرڈنیٹر میڈیا پنجاب صبا بٹ نے کہا ہے کہ چیئرمین تحریک انصاف عمران خان حقیقی معنوں میں ورکر دوست لیڈر ہیں میں نے پارٹی چیئرمین عمران خان کی آنکھوں میں سچ کی روشنی دیکھی ہے، پارٹی لیڈر شپ کے پیار اور محبت کی وجہ سے آج میں اتنے کم عرصے میں تحریک انصاف کی سینٹرل کمیٹی کی ممبر بن گئی ہوں قیادت نے مجھ پر جس اعتماد کا اظہار کیا ہے اس پر پورا اتروں گی ان خیالات کا اظہار انہوں نے پاکستان فورم میں کیا ۔ان کا کہنا تھا کہ میں اپنی پارٹی کی لیڈر شپ کی بے حد مشکور ہوں کہ جنہوں نے مجھے اہم کمیٹی کی ممبر بنایا ۔ پی ٹی آئی کا خواتین ونگ سب سے مضبوط ونگ ہے پی ٹی آئی کے خواتین ونگ پر ایک ماڈرن ونگ کا ٹھپہ لگانے والے دیکھ لیں کہ اسی خواتین ونگ نے پاکستان کی سیاسی تاریخ کے سب سے بڑے 126دن کے اسلام آباد کے دھرنے میں شرکت کی ۔انہوں نے کہا کہ یہ بات سچ ہے کہ پانامہ لیکس کے ایشو پر عدلیہ سے عوام نے جو توقعات وابستہ کی تھیں اس کے مطابق عدلیہ نے فیصلہ نہیں دیا عوام چاہتے تھے کہ ان کی کرپٹ اور بدعنوان حاکموں سے جان چھڑائی جائے یہ کیسی عوامی حکومت ہے کہ جس میں عوام کا ہر گزرتے دن کے ساتھ برا حال ہو رہا ہے لیکن حکمران اور ان کا خاندان ہی خوشحال ہو رہا ہے جب تک عوام خوشحال نہیں ہوں گے تب تک ایسی حکومت اور ایسے حکمرانوں کا کیا فائدہ ۔انہوں نے کہا کہ پوری دنیا میں پٹرول کی قیمتیں کم ہوتی ہیں لیکن یہاں کے حکمران اپنی عیاشیاں کرنے کے لئے اس کی قیمت کو یہاں کم نہیں ہونے دیتے اور طرح طرح کے پٹرول ٹیکس بھی عوام سے وصول کررہے ہیں دوسری جانب یہ بھی یہاں کے عوام کی ایک بڑی بدقسمتی ہے کہ زرعی ملک ہونے کے باوجود یہاں کے عوام کو کبھی مہنگا ٹماٹر خریدنا پڑتا ہے تو کبھی آلو کی قیمت کو بڑھا دیا جاتا ہے سبزیوں کی قیمتوں میں بھی ہوشربا اضافہ کردیا جاتا ہے اور ناجائز منافع خوروں کو پکڑنے والا کوئی نہیں ۔انہوں نے کہا حکومت کی پرائس کنٹرول کمیٹیاں نہ جانے کس کو کنٹرول کرنے میں مصروف ہیں اسی طرح سے امن و امان کی بھی بری حالت ہے جہاں پر لاہور شہر کے عوام محفوظ نہ ہوں وہاں کے چھوٹے اضلاع کے عوام کی کیا حالت ہو گی اس کا اندازہ اسی بات سے لگایا جا سکتا ہے لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کے دعوے دار روز نئی نئی تاریخیں دیکر جان چھڑانے میں مصروف ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1